پاکستان کا ایران کیساتھ دوائیں کی صنعت میں تعاون بڑھانے کا خواہاں

تہران، ارنا – پاکستانی وزیر صحت نے کہا ہے کہ ہم اسلامی جمہوریہ ایران کے ساتھ دوائیں کی صنعت میں تعاون بڑھانا چاہتے ہیں اور اس ملک کی مختلف تعلیمی، صحت اور علاج کی صلاحیتوں سے استعمال کرسکتے ہیں.

 یہ بات "ظفر میرزا" نے منگل کے روز تہران میں 66ویں مشرقی بحیرہ روم کے علاقائی وزرائے صحت کے اجلاس کے موقع پر ایرانی وزیر صحت "سعید نمکی" کے ساتھ ایک ملاقات کے دوران گفتگو کرتے ہوئے کہی.

انہوں نے کہا کہ دونوں ممالک کے درمیان صحت کے شعبے میں دوطرفہ تعلقات علاقے میں غیروبائی اور متعدی امراض کو روکنے میں مددگار ثابت ہوسکتے ہیں.
ظفر میرزا نے کہا کہ دوسرے ممالک صحت کے شعبے میں اسلامی جمہوریہ ایران کے اچھے تجربات سے استعمال کرسکتے ہیں کیونکہ اس ملک نے صحت اور طبی شعبوں مثبت اقدامات اٹھایا ہے.
انہوں نے مزید کہا کہ 66ویں مشرقی بحیرہ روم کے علاقائی وزرائے صحت کے اجلاس علاقائی طبی پالیسیوں کی ترقی اور دوسرے ممالک کی ٹیکنالوجی اور تجربات سے استعمال کرنے کے لئے ایک سنہرا موقع ہے.
انہوں نے کہا کہ ہمیں امید ہے کہ قریب مستقبل میں ایرانی صحت کے حکام پاکستان کا دورہ کریں اور ہمارے ملک کی طبی کامیابیوں کو نظارہ کریں گے.
تفصیلات کے مطابق، 66ویں مشرقی بحیرہ روم کے علاقائی وزرائے صحت کے اجلاس کا منگل کے روز ایرانی دارالحکومت تہران میں آغاز کیا گیا جس میں صدر حسن روحانی نے شرکت کی.
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
9 + 9 =