چہلم پیدل مارچ: 40 ہزار سے زائد پاکستانی زائرین کی ایران آمد

زاہدان، ارنا – 40 ہزار سے زائد پاکستانی زائرین گزشتہ ہفتے کے دوران کربلای معلی کے دورے کے لئے ایرانی صوبے سیستان و بلوچستان کے سرحدی علاقے میرجاوہ میں داخل ہوگئے ہیں.

یہ بات اس صوبے کے اربعین سیکرٹری جنرل اسٹاف "رضا بختیاری" نے ہفتہ کے روز ارنا نیوز ایجنسی کے ساتھ گفتگو کرتے ہوئے کہی.
انہوں نے کہا کہ جمعہ کے روز سات ہزار سے زائد پاکستانی زائرین میرجاوہ سرحدی علاقے میں داخل اور 143 ایرانی اور پاکستانی بسوں کے ذریعہ منتقل ہوگئے.
بختیاری نے کہا کہ ہم پاکستانی زائرین کے لئے چھ مختلف شعبے سمیت کھانا، رہائشگاہ، نقل و حمل، ثقافتی، صحت، علاج اور نیٹ ورک کی خدمات فراہم کر رہے ہیں.
انہوں نے مزید کہا کہ میرجاوہ سرحدی علاقے میں 12 اور زاہدان میں 8 موکب پاکستانی زائرین کا استقبال کر رہے ہیں.
انہوں ںے کہا کہ سیستان و بلوچستان کے سنی اور شیعی عوام گرمجوشی سے پاکستانی زائرین کی میزبانی کرتے ہیں.
ہرسال محرم الحرام اور اربعین کے موقع پر بڑی تعداد میں پاکستانی زائرین کربلای معلی کے دورے کے لئے ایرانی سرحدی علاقے میرجاوہ سے ملک میں داخل ہو رہے ہیں.
گزشتہ سال کے اربعین کے موقع پر 45 ہزار پاکستانی زائرین صوبے سیستان و بلوچستان کے سرحدی علاقوں سے ملک میں داخل ہوگئے، رواں سال ان کی تعداد 100 ہزار تک پہنچے گی.
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
1 + 1 =