بعض عناصر نے عراقی قوم کے حالیہ تحفظات کا غلط فائدہ اٹھانے کی کوشش کی: ظریف

تہران، ارنا – ایرانی وزیر خارجہ نے کہا کہ بعض عناصر نے عراقی عوام کے حالیہ تحفظات سے غلط فائدہ اٹھانے کی کوشش کی ہے جو یقینا وہ ایک چھوٹی سی اقلیت ہیں اور عراقی عوام کے نمائندے نہیں ہیں۔

یہ بات محمد جواد ظریف نے بدھ کے روز  تہران میں منعقدہ عالمی معیشت اور پابندیوں سے متعلق بین الاقوامی کانفرنس کے موقع پر عراق کی حالیہ بدامنی کے ردعمل پر صحافیوں کے ساتھ گفتگو کرتے ہوئے کہی.

انہوں نے عراق کی حالیہ بدامنی کے حوالے سے ایران کے موقف پر روشنی ڈالتے ہوئے ہوئی کہا کہ ہمیں یقین ہے کہ عراقی عوام اپنے ملک کے مالک ہیں اور ان کے حقوق کا احترام کیا جانا چاہیے.

ظریف نے کہا کہ ہم سمجھتے ہیں کہ عراقی قوم ہوشیار ہیں اور دوسروں کو اپنی قانونی مطالبات سے غلط فائدہ اٹھانے کی اجازت نہیں دیں گے.

ظریف نے کہا کہ امریکہ نے معاشی جنگ کے ذریعے ایران میں عام آدمی کی زندگی اور صحت کو نشانہ بنایا ہے.

انہوں نے مزید کہا کہ موجودہ دور میں بعض طاقتوں کے درمیان معیشت اور ڈالر سے جنگ کے آلے طور پر استعمال کرنا عام ہوچکا ہے.

انہوں نے ایرانی قوم کیخلاف مکمل اور کھلی جنگ کے جواز کے لیے امریکہ کی جانب سے پابندی کے لفظ کے استعمال کو غیرقانونی قرار دیا۔

انہوں نے مزید کہا کہ امریکہ نے آج نہ صرف ایران جوہری معاہدے کی خلاف ورزی کر کے بلکہ اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کی قرارداد 2231 کی بھی خلاف ورزی کی ہے.

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
5 + 6 =