نامور ایرانی شاعر اور فلاسفر یونیسکو کی عالمی فہرست میں شامل ہوں گے

تہران، ارنا – نامور ایرانی شاعر اور فلاسفر "عطار نیشابوری اور فارابی" آئندہ مہینے تک یونیسکو عالمی ثقافتی ورثے کی فہرست میں شامل کردئے جائیں گے.

یہ بات یونیسکو قومی ثقافتی کمیشن کے ڈائریکٹر "عبدالمہدی مستکین" نے منگل کے روز ارنا نیوز ایجنسی کے ساتھ گفتگو کرتے ہوئے کہی.
انہوں نے کہا کہ ہم نے گزشتہ دو سال سے نامور ایرانی مشاہیر اور شخصیات کے ناموں کو عالمی ثقافتی ورثے میں شامل کرنے کے لئے بھرپور کوشش کی.
مستکین نے کہا کہ 2019 کے نومبر کو یونیسکو فارابی اور عطار کے ناموں کو عالمی ورثے کی فہرست میں شامل کرے گی.
فرید الدین عطار، 1145ء یا 1146ء میں ایران کے شہر نیشابور میں پیدا ہوئے اور 1221ء میں وفات پائی۔ آپ کا اصل نام ابوحمید ابن ابوبکر ابراہیم تھا مگر وہ اپنے قلمی نام فرید الدین اور شیخ فرید الدین عطار سے زیادہ مشہور ہیں۔
آپ فارسی نژاد مسلمان شاعر، صوفی اور ماہر علوم باطنی تھے۔ آپ کا علمی خاصہ اور اثر آج بھی فارسی شاعری اور صوفیانہ رنگ میں نمایاں ہے۔
ابونصرفارابی کا پورا نام ’’محمد بن ترخان ابو نصر‘‘ تھے. علم ریاضی، طب، فلسفہ اور موسیقی میں تحقیق و تحاریر، منطق کی علمی گروہ بندی کی۔ ان کو ارسطو کے بعد دوسرا بڑا فلسفی بھی کہا جاتا ہے۔ انہوں نے علم طبیعیات میں وجود خلا پر اہم تحقیقات کیں۔ اس کے علاوہ ماہر عمرانیات، سیاسیات و موسیقیات بھی تھے۔ فارابی ارسطو اور افلاطون سے بے حد متاثر تھے.

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
6 + 12 =