8 اکتوبر، 2019 11:49 AM
Journalist ID: 2393
News Code: 83508193
0 Persons
ایران کی شام میں ممکنہ فوجی آپریشن کی مخالفت

تہران، ارنا – اسلامی جمہوریہ ایران نے شام میں کسی بھی طرح کے ممکنہ فوجی آپریشن کی مخالفت کا اعلان کیا ہے.

ایرانی وزارت خارجہ نے آج بروز منگل اپنی ایک رپورٹ میں شام کے شمالی علاقوں کی تازہ ترین تبدیلیاں اور شام کی سرزمین میں ترکی فوجی فورسز کے ممکنہ داخلے کے حوالے سے کہا کہ ایران شام میں کسی بھی ممکنہ فوجی اقدام کے ساتھ مخالف ہے.

ایرانی وزارت خارجہ نے شام میں ترکی فوجیوں کی ممکنہ آمد سے متعلق پریشان کن خبروں کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ ہم اس بات پر یقین ہیں کہ یہ اقدام نہ صرف ترکی کی سلامتی کی پریشانیوں کو حل نہیں کر سکتا ہے بلکہ وسیع پیمانے پر انسانی اور مادی نقصانات کا سبب بنے گا اسی لیے ایران کسی بھی ممکنہ فوجی اقدامات کے ساتھ مخالفت کرتا ہے.

اس بیان میں آیا ہے کہ شام میں امریکی فورسز کی موجودگی غیر قانونی ہے اور امریکہ کو آناً فانا اس سرزمین سے اپنی فوجی فورسز کو باہر نکلنا ہوگا.

اس بیان نے کہا کہ اسلامی جمہوریہ ایران، موجودہ خدشات کو پر امن طریقے سے حل کرنے کے لئے فوری طورپر ترک اور شامی حکام سے گفتگو کرنے پر تیار ہے۔

ایرانی وزارت خارجہ نے فوجی اقدامات کے ساتھ مخالفت، شام کی علاقائی سالمیت، قومی حکمرانی پر احترام، دہشتگردوں سے مقابلہ کرنا اور قیام امن پر زور دیا اور کہا کہ آدنا معاہدہ شامی اور ترک مسائل کا سب سے بہترین حل ہے.

قابل ذکر ہے کہ اسلامی جمہوریہ ایران اور ترکی کے وزرائے خارجہ نے گزشتہ روز ایک ٹیلی فونک رابطے کے دوران شام کے شمال مشرقی علاقے کی تازہ ترین صورتحال پر تبادلہ خیال کیا.

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
9 + 7 =