ایران کی دوسروں کے اندرونی معاملات میں امریکی مداخلت کی مذمت

تہران، ارنا - ایرانی محکمہ خارجہ کے ترجمان نے دوسرے ممالک کے اندرونی معاملات میں امریکی مداخلت کو بین الاقوامی قوانین کی خلاف ورزی قرار دیتے ہوئے اسے عدم استحکام پھیلانے کا امریکی حربہ قرار دے دیا.

 یہ بات سید "عباس موسوی" نے ہانک کانگ سے متعلق امریکی کانگریس کی حالیہ گستاخانہ قرارداد کے رد عمل میں کہی۔

انہوں نے مزید کہا کہ ان جیسے کیسوں میں یہ امریکی کانگریس کا پہلا اقدام نہیں ہے۔

موسوی نے مزید کہا کہ اسلامی جمہوریہ ایران، امریکہ کے اس طرح کے اقدمات کو دیگر ممالک کے اندرونی معاملات میں مداخلت قرار دیتے ہوئے ان کی سختی سے مذمت کرتا ہے۔

ایرانی محکمہ خارجہ کے ترجمان نے دوسرے ممالک کے اندرونی معاملات میں امریکی مداخلت کو بین الاقوامی حقوق کے خلاف ورزی قرار دیتے ہوئے اسے دیگر ممالک میں عدم استحکام پھیلانے کا امریکی حربہ قرار  دے دیا۔

موسوی نے اس بات پر زور دیا کہ احتجاج کا حق شہریوں کے حقوق میں سے ایک ہے، جو امن و امان کے دائرہ کار اور کسی بیرونی مداخلت کے تحت وقوع پذیر ہوگا۔

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
9 + 5 =