1 اکتوبر، 2019 4:31 PM
Journalist ID: 1917
News Code: 83499264
0 Persons
دنیا، امریکی یکطرفہ اقدامات کا مقابلہ کرے: ایرانی صدر

تہران، ارنا- اسلامی جمہوریہ ایران کے صدر مملکت نے کہا ہے کہ بین الاقوامی برادری کو فیصلہ کن اقدامات اور موثر کاروائی کے ذریعے امریکہ کے خصمانہ اور یکطرفہ اقدامات کیخلاف مقابلہ کرنا چاہیے۔

ان خیالات کا اظہار ڈاکٹر "حسن روحانی" نے یوریشین اقتصادی یونین کے سربراہی اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔

انہوں نے یوریشن اقتصادی یونین کے بڑے اجلاس میں حصہ لینے سے اپنی خوشی کا اظہار کرتے ہوئے یوریشین اقتصادی یونین میں اسلامی جمہوریہ ایران کی عارضی شمولیت کے معاہدے پر عمل درآمد کی تیاریوں پر اپنی مسرت کا اظہار کر دیا۔

صدر روحانی نے اس اجلاس کے انعقاد کے حوالے سے آرمینیا کے وزیر اعظم "نیکول پاشینیان" کی کوششوں کا شکریہ ادا بھی کیا۔

 ایرانی صدر نے مزید کہا کہ یوریشین اقتصادی یونین کے سربراہی اجلاس، بین الاقوامی اور علاقائی امور پر اپنے خیالات کا تبادلہ کرنے کا ایک بہت بڑ ا موقع ہے اور مجھے امید ہے کے اس اجلاس سے قابل قدر نتایج برآمد ہوں گے۔

انہوں نے مزید کہا کہ عالمی نظام، اجتماعیت اور بین الاقوامی برادری کے تمام اراکین کے درمیان مشترکہ تعاون پر استوار ہے لہذا سارے ممالک کو اپنی بین الاقوامی ذمہ داری اور کیے گئے وعدون کی بنا پر دنیا میں قیام امن و سلامتی سیمت یکطرفہ طرز عمل کیخلاف مقابلہ کرنے کی ضرورت ہے۔

صدر روحانی نے کہا کہ امریکی یکطرفہ اقدامات کیخلاف بعض ممالک بالخصوص اسلامی جمہوریہ ایران کی مزاحمت اس بات کا باعث بنی ہے کہ اب ہمیں غیر انسانی اور شدید پابندیوں کا شکار ہیں۔

 انہوں نے مزید کہا کہ امریکہ نے حالیہ سالوں کے دوران، یکطرفہ اقدامات، بین الاقوامی اور باہمی معاہدوں کی خلاف ورزی اور اپنے کیے گئے وعدوں پر بھر پور طریقے سے عمل نہ کرنے کے ذریعے بہت سے ممالک بشمول چین، روس اور حتی کہ اپنے اتحادیوں کو بھی نشانہ بنایا ہے۔

اسلامی جمہوریہ ایران کے صدر مملکت نے کہا ہے کہ بین الاقوامی برادری کو فیصلہ کن اقدامات اور  موثر کاروائی کے ذریعے امریکہ کے خصمانہ اور یکطرفہ اقدامات کیخلاف مقابلہ کرنا چاہیے۔

انہوں نے ایران جوہری معاہدے کو بین الاقوامی مسائل کے حل کیلئے ایک اچھی اور تعمیری مثال قرار دیتے ہوئے کہا جوہری معاہدے کے سارے اراکین کو اپنے کیے گئے وعدوں پر پوری طرح عمل کرنے کی ضرورت ہے۔

صدر روحانی نے مزید کہا کہ اقوام متحدہ کے تمام اراکین کو بھی ایران جوہری پر عمل درآمد اور اس کی حمایت کرنا چاہیے۔

انہوں نے مزید کہا کہ توقع کی جاتی ہے کہ ایران جوہری معاہدے کے تمام اراکین اس معاہدے کے نفاذ کیلئے عملی اقدمات اٹھائیں اور ساتھ ساتھ  دوسرے ممالک کو بھی خطے اور دینا میں قیام امن و استحکام کے سلسلے میں ایران جوہری معاہدے کی حمایت کرنے کی ضرورت ہے۔

*274**9467
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
6 + 2 =