30 ستمبر، 2019 4:55 PM
Journalist ID: 1917
News Code: 83497636
0 Persons
 ایران کی عراق کیساتھ  بغیر ویزا سفر کی تجویز

کربلا، ارنا- اسلامی جمہوریہ ایران کے وزیر داخلہ نے ایران اور عراق کے درمیان بغیر ویزا سفر کی تجویز دی۔

ان خیالات کا اظہار "عبدالرضا رحمانی فضلی" نے پیر کے روز عراقی شہر کربلا میں عراق کے حکام کیساتھ ایک مشترکہ نشست کے دوران گفتگو کرتے ہوئے کیا۔

اس نشست میں اربعین حسینی پیدل مارچ کیلئے بنیادی ڈھانچے اور خدمات کی فراہمی سے متعلق عراقی حکام بشمول وزیر داخلہ "یاسین الیاسری"، عراقی فوج کی آرمی چیف "عثمان الغانمی"، کربلا کے میئر "نصیف الخطابی"، عراق میں تعینات اسلامی جمہوریہ ایران کے سفیر "ایران مسجدی" اور دیگر حکام شریک تھے جنہوں نے اربعین پیدل مارچ کیلئے اٹھائے گئے اقدامات کی وضاحت کی۔

اس کے علاوہ اربعین پیدل مارچ کے زائرین بالخصوص ایرانی زائرین کی آمد ورفت میں آسانی سمیت ان کیلئے خدمات کی فراہمی سے متعلق فریقین کے درمیان ہم آہنگی ہوئی۔

اس موقع پر ایرانی وزیر داخلہ نے عراقی حکام بالخصوص ان کےعراقی ہم منصب یاسین الیاسری کو ابعین پیدل مارچ کے انعقاد کیلئے بھر پور تعاون کا شکریہ ادا کیا۔

انہوں نے حالیہ دنوں میں زائرین حسینی کےعراقی خادمین اور موکب داروں کے اجتماع  میں قائد اسلامی انقلاب حضرت آیت اللہ خامنہ ای کے بیات پر تبصرہ کرتے ہوئے اس عظیم تقریب کی عوامی ابعاد پر مکمل توجہ دینے کی ضرورت پر زور دیا۔

یہ بات قابل ذکر ہے کہ ایرانی وزیر داخلہ نے گزشتہ روز شہر نجف میں عراقی محکمہ داخلہ کے ترجمان بریگیڈیر جنرل "سعد معن" کیساتھ ایک مشترکہ پریس کانفرنس کے دوران گفتگو کرتے ہوئے کہا تھا کہ اسلامی جمہوریہ ایران، اربعین حسینی کے زائرین کے امور میں آسانی لانے کیلئےعراق کیساتھ  تعاون پر تیار ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ توقع کی جاتی ہے کہ اس سال 30 لاکھ ایرانی شہری، اربعین حسینی کے پیدل مارچ میں حصہ لیں لہذا ہم زائرین کیلئے مزید سہولیات کی فراہمی کیلئےعراق کیساتھ تعاون پر تیار ہیں۔

رحمانی فضلی نے اس بات پر زور دیا کہ ایران اور عراق نے ایرانی زائرین کو سفر عراق  کی مزید سہولیات فراہم کرنے کیلئے بہت اچھے اقدامات اٹھائے ہیں۔

انہوں نے اپنے اس دورہ عراق کے مقصد کو زائرین کی راہ میں ہر کسی ممکنہ رکاوٹ کو دور کرنے اور مزید خدمات کی فراہمی قرار دے دیا۔

واضح رہے کہ ایرانی وزیر داخلہ نے لاکھوں اربعین زائرین کے امور سے متعلق عراقی حکام کیساتھ ملاقات کیلئے مہران سرحد کے ذریعے عراق کا دورہ کیا۔
**9467
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
7 + 11 =