دارالفنون، ایران میں پہلی قدیم جامعہ، 173ویں سالگرہ کا انعقاد

تہران، ارنا - اسلامی جمہوریہ ایران میں عصری فن کی شاہکار «جامعہ دارالفنون» ملک میں بنائی گئی پہلی یونیورسٹی ہے جس کے 173ویں یوم تاسیس کی مناسبت سے خصوصی تقریب کا انعقاد کیا گیا.

ایران کے نئے تعلیمی سال کے آغاز کی مناسبت سے تہران میں واقع تاریخی اسکول دارالفنون کے پرنسپلز اور پروفیسرز کے ایک گروپ نے اس یونیورسٹی میں حاضری لگا کر علامتی طور پر، تعلیمی سال کے آغاز کی گھنٹی بجائی۔

دارالفنون ايران کے پرانے درسگاہوں ميں سے ہے جو سنہ 1851عیسوی ناصرالدين شاہ کے وزير اعظم 'مرزا تقی خان اميرکبير' کی کوشش سے بنايا ہوا تھا-

یہ اسکول تہران کی ناصر خسرو سڑک میں واقع ہے جس میں نوجوانوں کو انجینئرنگ، طب اور سائنس کے اصول سکھائے جاتے تھے۔

مرزا تقی خان امیر کبیر روس کے دورہ کے بعد اس کو یہ احساس ہوا کہ ملک میں ایک اعلی تعلیمی مرکز کی تعمیر کی فوری ضرورت ہے لہذا انہوں نے وزرات عظمی کے عہدے سنبھالنے کے ساتھ ہی اس مرکز کو قائم کرنے کی کوشش کی۔

امیر کبیر قاجاری بادشاہ 'ناصر الدین شاہ' کے زمانے میں ایران کے چانسلروں میں سے ایک تھے جو دارالفنون کے قیام کے علاوہ ایران میں بہت قابل قدر اصلاحی اقدامات کا بانی تھا

9410*274**
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
1 + 2 =