26 ستمبر، 2019 2:49 PM
Journalist ID: 2392
News Code: 83492231
0 Persons
علاقائی ممالک "ہرمز امن منصوبہ" میں شامل ہوں: ظریف

نیویارک، ارنا – ایرانی وزیر خارجہ نے خلیج فارس میں قیام امن کے لئے علاقے میں باہمی تعاون پر زور دیتے ہوئے تمام خطی ممالک سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ "ہرمز امن منصوبہ" میں شامل ہوں.

یہ بات "محمد جواد ظریف" نے گزشتہ روز نیویارک میں سلامتی کونسل کی "اقوام متحدہ اور علاقائی تنظیموں کے درمیان باہمی تعاون" کے عنوان سے نشست میں خطاب کرتے ہوئے کہی۔
اس موقع پر انہوں نے کہا کہ صدر روحانی نے اپنے خطاب میں پڑوسیوں کو «اتحادِ امید» اور «ہرمز امن منصوبے» میں شمولیت کی دعوت دی۔
ظریف نے خلیج فارس میں قیام امن کے لئے روسی تجویز کی اہمیت پر زور دیا اور کہا کہ اتحاد امید کی حقیقت یہ ہے کہ تمام علاقائی ممالک اس خطے میں سلامتی اور امن قائم کرنے کی ذمہ دار ہیں، وہ عالمی برادری کے ساتھ شپنگ اور توانائی کی منتقلی میں مشترکہ مفادات رکھتے ہیں۔
انہوں نے کہا کہ جنگ، تنازعات، تشدد، انتہاپسندی، دہشتگردی اور فرقہ وارانہ کشیدگیوں کو روکنے کے لئے علاقائی باہمی تعاون کی ضرورت ہے۔
انہوں نے کہا کہ "ہرمز امن منصوبہ" کا مقصد علاقائی ممالک کے درمیان باہمی تعاون اور یکجہتی، امن پسند اور دوستانہ تعلقات، سیاسی خودمختاری اور علاقائی سالمیت کا تحفظ، دہشتگردی کو خاتمہ دینا، توانائی کی سیکورٹی کی فراہمی، شپنگ اور تیل کی خودمختاری ہیں۔
انہوں نے مزید کہا کہ دہشتگردی سے مقابلہ کرنے کے لئے علاقائی باہمی تعاون نہایت اہم ہے سمیت مشرق وسطی اور افغانستان میں دہشتگردوں زیادہ کاروائی کر رہے ہیں لہذا علاقائی تنظیموں کا کردار بہت ہی اہم ہے، دہشتگردی خطرات کو روکنے کے لئے اقوام متحدہ اور علاقائی تنظیموں کے درمیان باہمی یکجہتی ناگزیر ہے۔

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
3 + 2 =