25 ستمبر، 2019 10:26 AM
Journalist ID: 2392
News Code: 83490153
0 Persons
یورپ اپنے وعدوں پر قائم رہے: ایرانی صدر

نیویارک، ارنا – ایران کے صدر مملکت نے تین یورپی ممالک کے ایران مخالف الزامات کو شدید تنقید کا نشانہ بنایا اور کہا ہے کہ یورپی ممالک بحیثیت رکن جوہری معاہدہ اپنے وعدوں پر قائم رہیں.

یہ بات ڈاکٹر "حسن روحانی" نے گزشتہ روز نیویارک میں اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی کے اجلاس کے موقع پر برطانوی وزیر اعظم «بورس جانسن» کے ساتھ ایک ملاقات کے دوران گفتگو کرتے ہوئے کہی.
اس موقع پر انہوں نے مشرق وسطی میں برطانیہ کی دیرینہ موجودگی کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ ہمیں تین یورپی ملکوں کے حالیہ ایران مخالف الزامات پر بہت افسوس ہے اور سمجھتے ہیں کہ موجودہ نازک صورتحال میں ایسے بیانات مسائل کے حل کے لئے غیرموثر ہیں.

صدر روحانی نے جوہری معاہدے کے اقتصادی مفادات سے ایران کے فائدہ اٹھانے کے لئے لندن کی کمزوری کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے مثبت معاشی ماحول قائم کرنے کو اراکین کے وعدوں میں سے ایک قرار دیا اور کہا کہ ان ممالک جلد اپنے وعدے سمیت انسٹیکس کے نفاذ پر عملدرآمد کریں.
انہوں نے ہرمز امن منصوبے پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ علاقائی ممالک کے درمیان باہمی تعاون خطے میں قیام امن کا واحد حل ہے اور دوسرے ممالک سمیت برطانیہ کی حمایت بہت ہی موثر ہوگی.
برطانوی وزیر اعظم نے بھی اس بات پر زور دیا کہ ہم تہران کے ساتھ دوطرفہ تعلقات کو فروغ دینا چاہتے ہیں، برطانیہ ہمیشہ جوہری معاہدے کا حامی ملک ہے.
انہوں نے خطے میں اسلامی جمہوریہ ایران کے اہم کردار کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ ہمیں امید ہے کہ خطے میں تنازعات کو خاتمہ اور جوہری معاہدے کو جاری رکھا جائے گا.
فریقین نے اس ملاقات کے دوران علاقائی اور عالمی مسائل اور جوہری معاہدے پر تبادلہ خیال کیا.
تفصیلات کے مطابق، صدر روحانی پیر کے روز اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی کے 74ویں اجلاس میں شرکت کے لئے نیویارک روانہ ہوگئے.
انہوں ںے دورے نیویارک میں پاکستانی ور جاپانی وزیر اعظم، فرانسیسی اور سویڈش صدر اورجرمن چانسلر کے ساتھ دوطرفہ ملاقاتیں کیں.
274*9393**
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
4 + 4 =