فرانس کی کوششیں صرف امریکی پابندیوں کے خاتمے سے کامیاب ہوں گی: ایرانی صدر

نیو یارک، ارنا - ایرانی صدر نے کہا ہے کہ امریکہ ایران کشیدگی کو کم کروانے سے متعلق فرانسیسی صدر کی کوششیں صرف امریکی پابندیوں کے خاتمے سے کامیاب ہوں گی.

ان خیالات کا اظہار  ڈاکٹر "حسن روحانی" نے نیویارک میں منعقدہ اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی کے 74 ویں اجلاس کے موقع پر امریکی ذرائع ابلاغ کے سینئر مینجروں سے ایک ملاقات میں گفتگو کرتے ہوئے کیا۔

صدر روحانی نے مزید کہا کہ ان کے فرانسیسی ہم منصب "ایمانوئل میکرون" کی کوششیں جب نتیجہ خیز ثابت ہوں گی تب امریکی صدر دونلڈ ٹرمپ، ایران مخالف امریکی پابندیوں کو اٹھائے جس کے بعد اسلامی جمہوریہ ایران گروپ 5+1 کے فریم ورک کے اندر امریکہ سے مذاکرات کر سکتا ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ ایران کیخلاف امریکی دباؤ میں اضافہ، بظاہر مذاکرات کیلئے امریکی پیشگی شرط ہے حالانکہ اسلامی جمہوریہ ایران کا موقف یہ ہے کہ مذاکرات کیلئے تمام پیشگی شرائط کو اٹھانے کی ضرورت ہے۔

صدر روحانی نے مزید کہا کہ شرم کی بات ہے کہ سعودی عرب کی تیل تنصیبات کے حالیہ حملوں میں ملوث ہونے کا الزام ایران پر لگایا جاتا ہے اور اس کی وجہ بھی یہی ہے کہ وہ یمنی فوج کی طاقت کو تسلیم نہیں کرنا چاہتے ہیں۔

انہوں نے مزید کہا کہ ایران کیخلاف الزام لگائے جانے والے، یمنی فوج کی ترقی کا اندازہ نہیں لگا سکتے ہیں لہذا وہ اپنی آنکھوں کو بند کرتے ہوئے قیاس آرائیاں کر رہے ہیں۔

واضح رہے کہ اسلامی جمہوریہ ایران کے صدر مملکت گزشتہ روز اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی کے 74 ویں اجلاس میں شرکت کرنے کیلئے نیویارک پہنچ گئے جہاں انہوں نے وزیر اعظم پاکستان عمران خان سمیت فر انسیسی صدر ایمانوئل میکرون کیساتھ الگ الگ ملاقاتیں کیں۔

صدر روحانی جاپان، سپین اور برطانیہ کے وزرائے اعظم سمیت بولیویا اور سوئٹزرلینڈ کے صدور سے بھی الگ الگ ملاقاتیں کریں گے۔

اس کے علاوہ اسلامی جمہوریہ ایران کے صدر مملکت کچھ گھنٹوں بعد خاتون جرمن چانسلر کیساتھ ملاقات کریں گے۔
*274**9467
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
6 + 10 =