امریکہ، دباؤ کے ذریعے ایران کو گھٹنے ٹیکنے کے خام خیالی سے نکل آئے: ظریف

تہران، ارنا - ایرانی وزیر خارجہ نے امریکی ریڈیو این پی آر سے گفتگو کرتے ہوئے کہا ہے کہ ایران، دباؤ کے سامنے سر نہیں جھکائے گا اور دوسرے لوگ اس خام خیال سے نکل آئیں.

"محمد جواد ظریف" نے مزید کہا کہ اسلامی جمہوریہ ایران، امریکی خصمانہ اقدامات کے خلاف مزاحمت کرے گا لہذا امریکہ، دباؤ کے ذریعے ایران کو گھٹنے ٹیکنے کے خام خیالی سے نکل آئے۔

انہوں نے مزید کہا کہ وہ یقین سے کہہ سکتے ہیں کہ امریکہ دباؤ کے ذریعے ایران کو گھنٹے ٹیکنے پر مجبور نہیں کرسکتا۔

ایرانی وزیر خارجہ نے اس بات پر زور دیا کہ اگر امریکہ ایران سے عزت اور احترام کیساتھ بات کریں تو ایک بہتر معاہدہ طے پایا جاسکتا ہے۔

ظریف نے اس بات کی یاد دہانی کرائی کہ 25 ستمبر کو اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کے 4 مستقل مندوب کے وزرائے خارجہ سمیت جرمنی اور یورپی یونین کے اعلی سفارتکار کے درمیان ایک اجلاس کا انعقاد کیا جائے گا۔

انہوں نے مزید کہا کہ اس اجلاس میں امریکہ کیلئے ایک خالی سیٹ ہے مگر اس سیٹ کا ٹیکٹ وہی قانون پر عمل پیرا ہونا ہے۔

 ایرانی وزیر خارجہ نے سعودی عرب کی تیل تنصیبات پر حالیہ ڈرون حملے میں ایران کے ملوث ہونے کے الزام کو مسترد کرتے ہوئے کہا کہ ایران کو اس طرح کے اقدامات سے کچھ نہیں ملے گا۔

*274**9467
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
4 + 6 =