امریکہ میں انتہاپسند حلقے سفارتی عمل میں روڑے اٹکارہے ہیں: ظریف

تہران، ارنا - ایرانی وزیر خارجہ نے کہا ہے کہ امریکہ میں ایک ایسا انتہاپسند سیاسی حلقہ موجود ہے جس کا مقصد ایران کے لئے سفارتی راستوں کو بند کروانا ہے.

یہ بات «محمد جواد ظریف» نے امریکی چینل سی این این کو خصوصی انٹریو دیتے ہوئے کہی جس کے ایک مختصر حصے کو نشر کیا گیا تھا. اس پروگرام کے مکمل حصے کو آج رات نشر کیا جائے گا.

انہوں نے اس سوال "آپ نے کہا تھا کہ ٹرمپ سفارتکاری دروازے بند کرنا چاہتا ہے" کے جواب میں کہا کہ امریکہ نے ایرانی مرکزی بینک پر ایک بار پھر پابندیاں عائد کرنے کے ساتھ مذاکرات کو ناممکن بنا دیا.
ظریف نے کہا کہ امریکی صدر یا ان کے جانشین کے لئے پابندیوں کی فہرست سے مرکزی بینک، قومی ترقیاتی فنڈ، پارس ٹریڈ ٹرسٹ کمپنی کے ناموں کو ہٹا دینا بہت مشکل ہوگا.
انہوں نے کہا کہ ٹرمپ کو ایسی تجویز دینے والوں کا مقصد امریکہ اور اسلامی جمہوریہ ایران کے درمیان سفارتکاری دروازے بند کرنا ہے.
تفصیلات کے مطابق، ایرانی وزیر خارجہ اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی کی 74ویں نشست میں شرکت کے لئے نیویارک کے دورے پر ہیں.
274*9393**
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
8 + 1 =