دباو پالیسی کے خاتمے پر ہی امریکہ سے مذاکرات ممکن ہیں: ایران

تہران، ارنا - نائب ایرانی وزیر خارجہ برائے سیاسی امور نے کہا ہے کہ ایران کے خلاف امریکہ کی زیادہ سے زیادہ دباؤ ڈالنے کی پالیسی ختم ہونے کی صورت میں ہی مذاکرات کے راستے کھل سکتے ہیں.

یہ بات "سید عباس عراقچی" نے برطانوی اینڈیپنٹ اخبار کے ساتھ گفتگو کرتے ہوئے کہی.
انہوں نے کہا کہ امریکی بڑھتی ہوئی پابندیاں اسلامی جمہوریہ ایران کے زیادہ سے زیادہ مزاحمت کا باعث بن گئی ہیں.
عراقچی نے کہا کہ حقیقی مذاکرات کے آغاز کے لئے معاشی جنگ کے خاتمے کی ضرورت ہے، نہ صرف ایران بلکہ کوئی ملک دباؤ کے تحت مذاکرات نہیں کرے گا.
انہوں نے مزید کہا کہ اگر ٹرمپ جوہری معاہدے پر واپس آئے تو ہم 5+1 نشست کے فریم ورک میں امریکہ کے ساتھ مذاکرات کریں گے.
274*9393**
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
6 + 9 =