یکطرفہ پابندیاں منظم یافتہ جرائم کیخلاف جنگ کی راہ میں رکاوٹ ہیں: ایران

لندن، ارنا- ویانا کی بین الاقوامی تنظیموں میں تعینات ایران کے مستقل مندوب نے انسانی اسمگلنگ کیخلاف جامع بین الاقوامی حکمت عملی اپنانے کی ضرورت پر زور دیا۔

انہوں نے مزید کہا کہ یکطرفہ اقدامات، منظم یافتہ جرائم کیخلاف بین الاقوامی تعاون کی راہ میں سب سے بڑی رکاوٹ ہیں۔

ان خیالات کا اظہار "کاظم غریب آبادی" نے جمعہ کے روز منظم یافتہ جرائم کی روک تھام سے متعلق اقوام متحدہ کے کنونشن کے اجلاس میں گفتگو کرتے ہوئے کیا۔

انہوں نے مزید کہا کہ انسانی اسمگلنک دنیا بھر میں خواتین اور بچوں کیلئے ایک کڑوی حقیقت ہے اور یہ انسانی حقوق اور انسانی وقار کی سب سے بڑی خلاف ورزی بھی ہے جو ابھی بھی بہت سارے ملکوں کو اس بحران کا شکار ہیں اور کوئی بھی ملک یہ اس جرم سے محفوظ نہیں ہے۔

غرب آبادی نے کہا کہ جارحیت، بیرونی مداخلت، قبضہ، جنگ، دہشتگردی، سیاسی عدم استحکام، نسل پرستی اور یکطرفہ اقدامات ان وجوہات میں سے ہیں جن کی بناپر لوگ بالآخر نقل مکانی اور انسانی اسمگلنگ اور غلامی کا شکار بنتے ہیں۔

ایرانی مندوب نے مزید کہا کہ اس مسلئے کا حل بنیادی طور بین الاقوامی تنظیموں بشمول اقوام متحدہ میں قائم دفتر برائے منظم یافتہ جرائم اور منشیات اسمگلنگ کی روک تھام، کی ذمہ داری ہے۔

انہوں نے انسانی اسمگلنگ کیخلاف جامع بین الاقوامی حکمت عملی اپنانے کی ضرورت پر زور دیا اور کہا کہ یکطرفہ اقدامات، منظم یافتہ جرائم کیخلاف بین الاقوامی تعاون کی راہ میں سب سے بڑی رکاوٹ ہیں۔

**9467
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
9 + 5 =