خلیج فارس میں اپنے مفادات کا بھر پور دفاع کریں گے: ایرانی سپہ سالار

بیجنگ، ارنا - ایرانی مسلح افواج کے سربراہ نے اس عزم کا اعادہ کیا ہے کہ ایران، خلیج فارس میں سلامتی اور اپنے مفادات کا بھرپور دفاع کرنے پر تیار ہے.

انہوں نے مزید کہا ہے موجودہ صورتحال کو دیکھتے ہوئے اسلامی جمہوریہ ایران خلیج فارس میں اپنے مفادات اور ملکی سلامتی کا بھرپور دفاع کرنے پر آمادہ ہے.

ان خیالات کا اظہار چین کے دورے پر آئے ہوئے میجر جنرل "محمد باقری" نے چین کی نیشنل ڈیفنس یونیورسٹی میں زیرتربیت فوجی اہلکاروں کیساتھ ایک اجلاس میں خطاب کرتے ہوئے کیا۔

انہوں نے مزید کہا کہ اسلامی جمہوریہ ایران، موجودہ صورتحال میں بین الاقوامی اصولوں کےفریم ورک کے اندر، مذہبی اور انقلابی نظریات سمیت قائد اسلامی انقلاب کی حکمت عملی اور عوام کے بے پناہ صلاحیتوں کے بھروسے پر فلاح اور بہبود اور قومی سلامتی کے فروغ کے مقصد سے دفاعی نظریہ کو بطور قومی سلامتی نظریہ منتخب کیا ہے۔

جنرل باقری نے کہا کہ اسلامی جمہوریہ ایران نے اسلامی انقلاب کی کامیابی کے بعد اس نظریے کے فریم کے اندر اپنی دفاعی اور عسکری صلاحیتوں کو بڑھا دیا ہے۔

 انہوں نے کہا کہ تاریخ خود گواہ ہے کہ اسلامی جمہوریہ ایران نہ کبھی جارحیت اور جنگ کا آغاز کیا ہے اور نہ ہی کرے گا۔

ایرانی سپہ سالار نے مزید کہا کہ لیکن ہم اغیار کی کسی جارحیت کیخلاف اپنی ملکی سالیمت اور قومی خودمختاری کا بھر پور دفاع کریں گے۔

انہوں نے اس سے پہلے چین کی نیشنل ڈیفنس یونیورسٹی کے سربراہ کیساتھ ایک ملاقات میں کہا کہ ہم دونوں ملکوں کے درمیان دفاعی تعلقات کے فروغ کیلئے ایران اور چین کی نیشنل ڈیفنس یونیورسٹیوں کے درمیان تجربات کے تبادلہ پر تیار ہیں۔
*274**9467
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
6 + 12 =