مذاکرات اور امریکہ کی معاشی دہشتگردی ایک ساتھ نہیں چل سکتے: ایران

نیو یارک، ارنا - اقوام متحدہ میں تعینات اسلامی جمہوریہ ایران کے مستقل مندوب نے یہ واضح کردیا ہے کہ جب تک ایرانی قوم کو امریکہ کی جانب سے معاشی دہشتگردی کا سامنا ہے، تب تک ان سے کوئی مذاکرات نہیں ہوں گے.

یہ بات "کجید تخت روانچی" نے منگل کے روز ارنا نیوز ایجنسی کے ساتھ گفتگو کرتے ہوئے کہی۔ تخت روانچی کے مطابق، امریکی مشیر قومی سلامتی جان بولٹن کی برطرفی وہاں کا اندرونی معاملہ کیا. انہوں نے کہا کہ مختلف حکومتوں کی تبدیلیاں ایک اندرونی مسئلہ ہے اور تمام حکومتوں میں موجود ہیں۔ انہوں نے مزید کہا کہ بولٹن کی تبدیلی اس مسئلہ کا شامل ہے اور ہم ممالک کے اندرونی مسائل پر کوئی موقف اختیار نہیں لیں گے۔ اقوام متحدہ میں ایرانی مندوب نے بولٹن کی برطرفی کے ساتھ واشنگٹن کے جنگ خواہی کے رویے پر موثر ہونے کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ اس موضوع پر بات چیت کرنا قبل از وقت ہے، بولٹن کو انتہا پسندی کے نام سے جانا جاتا تھا حتی ٹرمپ نے خود بھی اس موضوع کا اظہار کیا تھا۔ انہوں نے کہا کہ امریکی غلطی پالیسیوں کی تبدیلی اس ملک کی خارجہ پالیسی اور موثر مختلف وجوہات پر منحصر ہے۔

274٭9393٭٭

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
9 + 2 =