چابہار پورٹ سے افغان پھلوں کی پہلی کھیپ کو برآمد کیا گیا

تہران، ارنا - افغانستان کے محکمہ صنعت و تجارت کے مطابق، ایران کی جنوبی بندرگاہ چابہار سے افغان پھلوں کی کھیپ کو پہلی بار بھارت کے لئے روانہ کردیا گیا ہے.

"سمیر رسا" نے اس امید کا اظہار کردیا ہے کہ ایرانی بندرگاہ چابہار کے ذریعے برآمدات کے عمل کا سلسلہ جاری رکھے گا۔

انہوں  نے مزید کہا کہ چابہار کے راستے برآمدات کے عمل کو کئی شہروں جیسے افغانستان کے شہر نیمروز سے چابہار کی منتقلی اور وہاں سے بھارت کے شہر ممبئی میں بھیجنے کے ذریعے عارضی طور پر تجربہ کیا گیا ہے۔

رسا نے چابہار کے راستے برآمدت کو ایک اچھا تجربہ قرار دیتے ہوئے اس امید کا اظہار کردیا کہ افغانستان، مستقبل میں اس راستے کے ذریعے مزید برآمدات کرے گا۔

اس کے علاوہ افغان وزیر برائے صنعت اور تجارت "اجمل احمدی" نے بھی سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پرایک پیغام میں کہا کہ آئندہ تین ہفتوں میں بندرگاہ چابہار کے راستے افغانستان کی برآمدات کی شرح  وزن کے لحاظ سے100 ٹن تک پہنچ جائے گی۔

انہوں نے مزید کہا کہ اب تک چابہار کے ذریعے افغانستان میں مصنوعات کی منتقلی کی شرح،وزن کے لحاظ سے 700 ٹن تک پہنچ گئی ہیں اور بہت جلد اسی راستے کے ذریعے سیب اور انار کے پھلوں کی برآمدات کا آغاز کیا جائے گا۔

یہ بات قابل ذکر ہے کہ بھارت نے چابہار کی بندرگاہ کی تعمیر و توسیع کے منصوبے پر پچاس کروڑ ڈالر کی سرمایہ کاری کر رکھی ہے اور توقع ظاہر کی جا رہی ہے کہ اس نئی تجارتی راہداری سے بھارت کو وسطی ایشیا تک بھی آسان رسائی مل جائے گی۔

*274**9467
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
4 + 5 =