جوہری معاہدے کے وعدوں میں کمی لانے کے تیسرے مرحلے کا کل اعلان کیا جائے گا: ایرانی صدر

تہران، ارنا - صدر مملکت اسلامی جمہوریہ ایران نے کہا ہے کہ ہم نہیں سمجھتے کہ یورپی فریق آج یا کل اپنے وعدوں کی پاسداری کے لئے کوئی قدم اٹھائے اسی لئے ایران کی جانب سے اس معاہدے سے متعلق وعدوں کی معطلی کے تیسرے مرحلے کا کل اعلان کردیا جائے گا.

یہ بات ایرانی صدر ڈاکٹر حسن روحانی نے آج بروز منگل ایرانی کابینہ کے اجلاس میں مذاکراتی عمل کے سلسلے کی وضاحت کرتے ہوئے کہی.
انہوں نے ایران اور فریقین کے درمیان مذاکرات کے عمل کو آگے کی سمت بڑھانے کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ یورپ کے ساتھ باہمی مذاکرات میں اختلافات کے ایک اہم حصے کے حل کے باوجود، ابھی بھی ہم حتمی سمجھوتے تک نہیں پہنچ سکے ہیں، اسی تناظر میں ایران اس معاہدے پر اپنی ذمہ داریوں کو کم کرنے کے تیسرے فیصلے کو اٹھائے گا.
روحانی نے مزید بتایا آج یا کل اس تیسرے مرحلے کی تفصیلات کا اعلان کر کے اس پر عمل کریں گے۔
صدر روحانی نے کہا کہ مثال کے طور پر اگر ماضی میں ہم اور یورپی فریقین کے درمیان 20 مسئلے پر اختلاف تھا اب صرف ہمارا اختلاف صرف 3 مسئلے پر ہے لیکن ہم ابھی بھی حتمی نتیجے پر نہیں پہنچے ہیں.
ایرانی صدر نے کہا کہ ہم نہیں سمجھتے کہ یورپی فریق آج یا کل اپنے وعدوں کی پاسداری کے لئے کوئی قدم اٹھائے اسی لئے ایران کی جانب سے اس معاہدے سے متعلق وعدوں کی معطلی کے تیسرے مرحلے کا کل اعلان کردیا جائے گا.
انہوں نے کہا کہ "بظاہر یہ تیسرا قدم بہت حیران کن نہیں ہے لیکن انتہائی اہم ہے، میری رائے میں یہ قدم بہت اہم ہے کیونکہ اس اقدام سے ایران کے ایٹمی ادارے کی سرگرمیوں کی رفتار میں مزید تیزی آئے گی"۔
روحانی نے کہا کہ باوجود اس کے ہم ایرانی وعدوں کو مکمل درآمد کرنے کے لیے یورپی فریقین کو ایک اور 60 روزہ الٹی میٹم دیں گے.
9410٭274٭٭
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
1 + 1 =