ایران میں 60 جدید سنٹری فیوجز کی پیداواری صلاحیت فراہم کیا گیا

کرج، ارنا- اسلامی جمہوریہ ایران کے جوہری ادارہ کے سربراہ نے ایران کے جوہری ٹیکنالوجی کے لوکلائزیشن پر زور دیتے ہوئے کہا ہے کہ ملک میں 60 جدید سنٹری فیوجیز کی پیداواری صلاحیت فراہم کیا گیا ہے۔

ان خیالات کا اظہار "علی اکبر صالحی" نے ایرانی صوبے البرز میں سب سے پہلے آئن تھراپی ہسپتال کی تعمیر کے عمل سے معائنہ کرتے ہوئے کیا۔

انہوں نے مزید کہا کہ ہم نے کان کنی کے شعبے میں بہت بڑی پیشرفت کرتے ہوئے ایران کے معدنی وسائل کے 80 فیصد کے حصے کو شناخت کر لیا ہے۔

علی اکبر صالحی نے کہا کہ ہم ان اقدامات کے ذریعے ملک کے جیولوجیکل ریسرچ سنٹر اور وزارت پیٹرولیم کو بہت سی خدمات فراہم کرنے میں کامیاب رہے ہیں۔

 ایران جوہری ادارہ کے سربراہ نے مزید کہا کہ ہم نئے سنٹری فیوجز کی تحقیق اور نشوونما کرکے ، " اے آر 6" جنریشن کو انسٹال کرنے میں کامیاب ہوگئے ہیں جو بہت سارے بیرونی ممالک کے احتجاج کا باعث ہوا ہے۔

انہوں نے ملک میں نئی جوہری منصوبوں پر کام کرنے کا اعلان کرتے ہوئے کہا کہ ملک کا سب سے بڑا آئن تھراپی ہسپتال صوبے البرز  میں 10 ایکڑ کے رقبے پر تعمیر کیا جارہا ہے۔

 صالحی نے مزید کہا کہ اس ہسپتال کے صرف 6 نمونے دنیا میں بنائےگئے ہیں ، اور یہ ہسپتال پروٹون آئنوں کی تابکاری کے ذریعہ ہر قسم کے کینسر کے علاج کے لئے ایک خصوصی ہسپتال ہے۔

**9467
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
8 + 5 =