ایران اور جاپان مالیاتی لین دین کیلئے مخصوص نظام قائم کریں گے

بیجنگ، ارنا- جاپان میں تعینات ایرانی سفیر نے کہا ہے کہ دونوں ملکوں کے درمیان اقتصادی تعاون کی توسیع کے لئے مخصوص مالیاتی نظام کا قیام عمل میں لایا جائے گا۔

یہ بات "مرتضی رحمانی موحد" نے ایرانی وزیر خارجہ "محمد جواد ظریف" کے دورہ چاپان کے موقع پر ارنا نمائندے کیساتھ گفتگو کرتے ہوئے کہی۔

انہوں نے مزید کہا کہ ایران مخالف امریکی معاشی دہشتگردی نے ایران اور جاپان کے درمیان تجارتی تعلقات پر بُرے اثرات مرتب کیے ہیں۔

ایرانی سفیر نے مزید کہا کہ توقع کی جاتی ہے کہ جاپان امریکی یکطرفہ اقدامات کی پروا کیے بغیر اسلامی جمہوریہ ایران کیساتھ تعلقات کے فروغ کیلئے سنجیدہ اقدمات اٹھائے۔

رحمانی موحد نے چاپانی حکومت سے مطالبہ کیا کہ وہ ایران کیساتھ تجارتی تعلقات کے فروغ کے راستے پر قدم رکھے اور ایران کا یہ مطالبہ، بین الاقوامی قوانین، ایران جوہری معاہدے سے متعلق کیے گئے اقتصادی وعدوں سمیت اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کی قرارداد 2231 کے مطابق ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ توقع کی جاتی ہے کہ بین الاقوامی برادری بالخصوص جاپان، ایران مخالف امریکی یکطرفہ اقدامات سے دور رہیں۔

یہ بات قابل ذکر ہے کہ اسلامی جمہوریہ ایران کے وزیر خارجہ "محمد جواد ظریف" منگل کے روز ٹوکیو پہنچ گئے جہاں وہ جاپانی حکام کیساتھ ملاقاتیں کریں گے۔

*274**9467
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
5 + 1 =