ایران اور چین کو عالمی امن و سلامتی کا تحفظ کرنا چاہئے: ظریف

تہران، ارنا- اسلامی جمہوریہ ایران کے وزیر خارجہ نے کہا ہے کہ ایران اور چین کو چاہئیے کہ وہ عالمی امن و سلامتی کا تحفظ کرنے سمیت ایک دوسرے کیساتھ باہمی تعلقات کا فروغ دیں۔

ان خیالات کا اظہار "محمد جواد ظریف" نے انگریزی زبان میں چینی اخبار "گلوبل ٹائمز" میں اپنے شائع شدہ ایک مضمون میں کیا ہے۔

انہوں نے اپنے آئندہ دورہ چین کا ذکر کرتے ہوئے کہا ہے کہ وہ چین کے دوبارہ دورہ اور چینی حکام کیساتھ ملاقاتوں سے بہت خوش ہیں۔

ایرانی وزیر خارجہ نے دونوں ممالک کے درمیان تاریخی تعلقات کا ذکر کرتے ہوئے ایران اور چین کے درمیان باہمی تعلقات کے فروغ پر زور دیا۔

ظریف نے مزید کہا چین، ایران کے ایک اہم اقتصادی شراکت دار ہے اور دونوں ممالک کے درمیان اسٹریٹجک تعلقات قائم ہیں۔

ایرانی وزیر خارجہ نے کہا کہ ایران اور چین نے ترقی کی راہ میں رونما ہونے والے بہت سارے چیلنجز کو باہمی تعاون کے ذریعے دور کیا ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ آج دونوں ممالک کے درمیان تعلقات کو مزید مضبوط کرنے کی ضرورت ہے اور ایران اور چین کو پائیدار ترقی اور اپنے اہداف کے حصول تک بہت سے چیلنجز بشمول ماحولیاتی تحفظ، غربت کے خاتمہ اور انتہاپسندی اور دہشتگردی کا سامنا کرتا پڑتا ہے لہذا دونوں ممالک کے درمیان پہلے سے زیادہ باہمی تعاون ناگریز ہے۔

ظریف نے مزید کہا کہ ایران و چین بطور دو عظیم تہذیب و ثقافت رکھنے والے ممالک کے دنیا کے مستقبل میں انتہائی اہم کردار ادا کر رہے ہیں لہذا تہران اور بیجنگ ایشیا میں بحثیت دو آزاد اور خودمختار ممالک کے ایک دوسرے کیساتھ قریبی رابطے میں ہیں اور وہ ایک ایسے مستقبل کی طرف جارہے ہیں جس سے انہیں ایک بہتر جگہ ملے۔

**9467
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
9 + 5 =