آبنائے ہرمز میں غیر ملکی افواج کی موجودگی عدم استحکام کا باعث ہے: ایران

نیویارک، ارنا - اقوام متحدہ میں تعینات اسلامی جمہوریہ ایران کے مستقل مندوب نے کہا ہے کہ آبنائے ہرمز میں امن و امان کے تحفظ کو علاقائی اور ساحلی ممالک کی ذمہ داری قرار دیتے ہوئے کہا کہ اس اسٹریٹجک آبنائے میں غیر ملکی افواج کی موجودگی عدم استحکام کا باعث بنی ہے جو ناقابل برداشت ہے۔

یہ بات مجید تخت روانچی نے گزشتہ روز اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل میں ' مشرق وسطی میں امن و سلامتی کو لاحق خطرات' متعلق اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہی۔

ایران کے مستقل مندوب نے مسئلہ فلسطین کو مشرق وسطی کے علاقے کا سب سے طویل اور اہم مسئلہ قرار دیتے ہوئے کہا کہ جب تک مسئلہ فلسطین حل نہ ہوئے علاقے میں امن و امان برقرار نہیں ہو گا۔

مجید تخت روانچی نے علاقے میں امریکی مداخلت کی جانب اشارہ کرتے ہوئے کہا کہ امریکی مداخلتوں کا آپ بخوبی ایران،افغانستان،عراق، شام اور یمن میں مشاہدہ کر سکتے ہیں۔

انہوں نے مزید بتایا کہ فلسطینی مسئلہ کا واحد حل  فلسطین پر غیرقانونی قبضہ کو خاتمہ دیناہے کیونکہ اس مسئلہ کا اس کا کوئی جادوئی حل نہیں ہے۔

9410٭274٭٭

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
5 + 6 =