امریکہ نے خلیج فارس کو آتش گیر مادے میں تبدیل کردیا ہے: ظریف

تہران، ارنا - ایرانی وزیر خارجہ نے کہا ہے کہ امریکہ نے ملک ہتھیاروں کی فروخت سے خلیج فارس کے خطے کو آتش گیر مادے میں تبدیل کردیا جو کسی بھی وقت پھٹ سکتا ہے.

یہ بات "محمد جواد ظریف" نے گزشتہ روز الجیریا ٹی وی چینل کے ساتھ گفتگو کرتے ہوئے کہی.
اس موقع پر انہوں نے واشنگٹن کی جانب سے خلیج فارس کے ممالک کو ہٹھیاروں کی فروخت کے سلسلے پر تنقید کرتے ہوئے کہا کہ امریکہ نے گزشتہ سال علاقائی ممالک کو 50 ارب ڈالر فوجی ہٹھیاروں کی فروخت کی.

ظریف نے کہا کہ بعض علاقائی ممالک جن کی آبادی ایران کی آبادی کا ایک تہائی سے بھی کم ہے، ابھی تک فوجی ہٹھیاروں کو خریدنے کے لئے 87 ارب ڈالر خرچ کیا ہے.
انہوں نے کہا کہ امریکہ اور ان کے اتحادی کی جانب سے علاقے میں ہٹھیاروں کی فروخت ایک بڑا خطرہ ہے.
ایرانی وزیر خارجہ ںے اس بات پر زور دیا کہ امریکہ نے خلیج فارس خطے کو دھماکہ خیز باکس میں تبدل کردیا ہے.
تفصیلات کے مطابق، ایرانی وزیر خارجہ "محمد جواد ظریف" نے گزشتہ روز دوحہ کے دورے کے موقع پر اپنے قطری ہم منصب "محمد بن الرحمان آل ثانی" کے ساتھ ایک ملاقات کے دوران مشترکہ اور علاقائی مسائل پر تبادلہ خیال کیا.
ایرانی وزیر خارجہ اتوار کے روز قطری حکام کے ساتھ ملاقات کے لیے قطر روانہ ہو گئے۔
274*9393**
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
5 + 9 =