غیرملکی فورسز، خلیج فارس میں بڑھتی کشیدگی کا باعث ہیں: ایرانی نائب صدر

تہران، ارنا – ایرانی سنیئر نائب صدر نے کہا ہے کہ خلیج فارس میں غیر ملکی فورسز کی موجودگی عدم استحکام اور بڑھتی ہوئی کشیدگی کا باعث ہے۔

یہ بات اسحاق جہانگیری جو، ترکمانستان کے دورے پر ہے،آج بروز پیر کیسپین اکنامک فورم کے پہلے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہی۔

بین الاقوامی آبی گزرگاہوں اور شمالی اور جنوبی ساحلوں اور ہرمز آبنائے کے استحکام اور سلامتی کا قیام ایرانی ریڈ لائن ہے۔

انہوں نے مزید بتایا کہ امریکہ جوہری معاہدے سے یکطرفہ اور غیر قانونی علیحدگی کے ساتھ اس بات کا ثابت کردیا کہ وہ بین الاقوامی معاہدوں پر پابند نہیں ہے۔

جہانگیری نے کہا کہ ہر چند عالمی جوہری ادارے نے بارہا جوہری معاہدے پر ایران کی دیانتداری کی تصدیق کی ہے لیکن امریکہ ایران مخالف ظالمانہ اور غیر قانونی پابندیوں کے ساتھ خطے میں عدم استحکام اور بدامنی برقرار رکھنا چاہتا ہے۔

انہوں نے کہا کہ اگرچہ خطے میں ایران کی موثر پوزیشن کی وجہ سے امریکہ کی ایران فوبیا پالیسی ناکام ہو چکی ہے لیکن لیکن سیکیورٹی بیچنے کے لئے بدامنی پیدا کرنا امریکیوں کی فریب کارانہ حکمت عملی ہے۔

انہوں نے کہا کہ ہمسایہ ممالک سے بات چیت کرنا ، کسی تناؤ سے گریز کرنا اور علاقائی استحکام اور سلامتی کو برقرار رکھنا اسلامی جمہوریہ کی خارجہ پالیسی کی کلیدی ترجیحات میں شامل ہیں۔

9410٭274٭٭
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
8 + 3 =