ایرانی قرہ چرچ مذہبی تہوار عالمی ورثے کی فہرست میں شامل کیا جائے گا

ارومیہ، ارنا - ایرانی صوبے آذربائجان غربی کے علاقے «چالدران» میں واقع تاریخی گرجاگھر "تاتائوس مقدس" میں منعقد ہونے والے مسیحی برادری کے عالمی تہوار باداراک اقوام متحدہ کی تنظیم برائے ثقافت، یونیسکو کی فہرست میں شامل کی جائے گا.

یہ بات اس صوبے کی ثقافتی، دستکاری صنعت اور سیاحتی تنظیم کے ڈپٹی "حسن سپہر فر" نے ہفتہ کے روز ارنا نیوز ایجنسی کے ساتھ گفتگو کرتے ہوئے کہی.
یاد رہے کہ ایرانی صوبے آذربائجان غربی کے علاقے «چالدران» میں مسیحی تہوار باداراک کا 25 سے 27 جولائی تک تاریخی گرجاگھر "تاتائوس مقدس" میں انعقاد کیا گیا جس میں تین ہزار سے زائد عیسائیوں نے شرکت کی.
آرمینیا، شام، لبنان، پولینڈ، فرانس، آسٹریا، جرمنی، کینیڈا اور دوسرے ممالک کے عیسائیوں منعقد ہونے والی تقریب میں شریک تھے۔
ایرانی اور دنیا کے عیسائیوں باداراک مذہبی تقریب میں خدا کی عبادت، قربانی اور بچوں کو بپتسمہ دینے پر سرگرم تھے۔
اسلامی جمہوریہ ایران میں سالانہ عیسائیوں کی مذہبی رسم کا انعقاد اس ملک میں الہامی ادیان کے پیروکاروں کی پرامن زندگی گزارنے کی علامت ہے اور انسانی حقوق، سلامتی اور امن کے لحاظ سے ایران مذہبی اقلیتوں کے لئے سب سے بہترین ماڈل ہے۔
قرہ چرچ ایک آذری لفظ ہے جس کا معنی بلیک یا تادئوس چرچ (St. Thaddeus Monastery) ہے. یہ چرچ ایرانی صوبے آذربائیجان غربی کے شہر ارومیہ میں واقع ہے جو سیاہ اور سفید پتھروں اور خوبصورت گنبدوں کی وجہ سے دنیا کے سب سے دلکش اور قدیم ترین کلیساوں میں سے ایک ہے.
یہ چرچ تاریخی اور مذہبی اہمیت کےعلاوہ فن تعمیر اور خصوصی آرکیٹیکچرل کے لحاظ سے منفرد ہے.
9393**
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
5 + 12 =