تیل اور بینکنگ تعلقات کی بحالی ایران کے سب سے اہم حقوق ہیں: صدر روحانی

تہران، ارنا- اسلامی جمہوریہ ایران کے صدر مملکت نے اپنے فرانسیسی ہم منصب کیساتھ ایک ٹیلی فونک رابطے میں تیل اور بینکنگ شعبے میں ایران اور دوسرے ممالک کے درمیان تعلقات کی جلد بحالی کو جوہری معاہدے میں ایران کے سب سے اہم حقوق قرار دے دیا۔

ایرانی صدر نے اس سلسلے میں تعمیری اور انصاف پر مبنی راہ حل نکالنے کیلئے ہونے والی کوششوں کا سلسلہ جاری رکھنے پر زور دیا۔

ڈاکٹر "حسن روحانی" نے منگل کی رات اپنے فرانسیسی ہم منصب "ایمانوئل میکرون" کیساتھ ایک ٹیلی فونک رابطے میں مزید کہا کہ بڑی افسوس کی بات ہے کہ جہاں ایران اور فرانس خطے میں حالیہ کشیدگی کو کم کرنے اور پرامن بقائے باہمی کے حصول کیلئے کوشش کر رہے ہیں وہاں امریکی مشتعل انگیز اقدامات دیکھنے میں آئے ہیں۔

انہوں نے مزید کہا کہ ایران کی خواہش خطے میں قیام امن و سلامتی اور آبنائے ہرمز میں بحری جہازوں کی آزادانہ اور پُر امن نقل و حرکت ہے اور روزانہ دسیوں بحری جہاز آزادانہ طور پر آبنائے ہرمز آتے جاتے ہیں اور ایرانی سیکورٹی فورسز بھی قانون کے مطابق اپنے فرائض کو سرانجام دے رہے ہیں۔

انہوں نے حالیہ مہینوں میں کیے گئے مذاکرات کو مثبت اور تعمیری قرار دیتے ہوئے مزید کہا کہ جوہری معاہدے سے متعلق ایران کیجانب سے اپنے کیے گئے وعدوں میں کمی کا مقصد، اس معاہدے کے معاشی ثمرات سے مستفید ہونے سمیت دوسرے فریقین کیجانب سے اپنے وعدوں پر بھر پور طریقے سے عمل کرنا ہے۔

انہون نے ایران اور دیگر ممالک کے درمیان تیل اور بینکنگ تعلقات کی بحالی کو جوہری معاہدے سے متعلق ایران کے سب سے اہم حقوق قرار دے دیا اور اس سلسلے میں تعمیری اور انصاف پر مبنی راہ حل نکالنے کیلئے ہونے والی کوششوں کا سلسلہ جاری رکھنے پر زور دیا۔

صدر روحانی نے مزید کہا کہ ایران اور یورپ کے درمیان تعاون کا فروغ خطے اور دنیا میں قیام امن برقرار کرنے میں مدد گار ثابت ہوسکتا ہے لہذا فرانس، بطور ایران کے ایک دیرینہ شراکت دار کے اس حوالے سے تعمیری کردار ادا کر سکتا ہے۔

اس موقع پر فرانس کے صدر نے ایک با پھر کہا کہ ان کا ملک ایران جوہری معاہدے پرقائم رہے گا اور اسلامی جمہوریہ ایران کو جوہری معاہدے کے ثمرات سے مستفید ہونے سمیت اس سلسلے میں ایک قابل قبول حل نکالنا، فرانس کیلئے انتہائی اہم ہے۔

انہوں نے خطی اور بین الاقوامی مسائل کے حل کیلئے مناسب طریقہ کار نکالنے کیلئے ایران اور فرانس کے ماہرین کے درمیان مذکرات کے حوالے سے ایرانی صدر کی تجویز کا خیر مقدم کرتے ہوئے تہران اور پیرس کے درمیان باہمی تعلقات کے فروغ پر زور دیا۔

**9467
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
6 + 8 =