تیل برآمدات کی سطح 28 لاکھ بیرل تک واپس لانا ایران کا کم سے کم مطالبہ ہے: ظریف

تہران، ارنا - ایرانی وزیر خارجہ نے اس بات پر زور دیا ہے کہ ملکی تیل برآمدات کی سطح 28 لاکھ بیرل پر واپس لانا ہمارا کم سے کم مطالبہ ہے.

یہ بات "محمد جواد ظریف" نے پیر کے روز اپنی پریس کانفرنس میں صحافیوں کے ساتھ گفتگو کرتے ہوئے کہی.
محمد جواد ظریف نے مغربی فریقین پر زور دیا ہے کہ جوہری معاہدے کے شفاف اجرا کے علاوہ ایران پر سے معاشی پابندیاں ہٹائیں.
انہوں نے مزید کہا کہ صدر روحانی نے بھی یورپ سے اس بات کا مطالبہ کیا تھا ہے اور ہم اس کا جائزہ لے رہے ہیں.
انہوں نے کہا کہ یورپ کو جوہری معاہدے کے فریم ورک میں اپنے وعدوں پر ہر صورت میں عمل کرنا ہوگا.
ایرانی وزیر خارجہ نے کہا کہ جوہری معاہدے سے امریکی علیحدگی کے بعد یورپ نے 11 وعدوں پر عمل کرنے کا عہد کیا تھا جن میں سے ایرانی تیل کی فروخت، تیل لین دین کی رقم کی واپسی، برآمدات اور درآمدات کے لئے شپنگ انشورنس شامل ہیں تاہم مغربی فریقین نے ابھی تک ان وعدوں پر عملدرآمد نہیں کیا.
انہوں نے کہا کہ یورپ جانتا تھا کہ اگر امریکہ، ایران جوہری معاہدے سے نکل جائے تو وہ یہ نہیں کہہ سکتے کہ "ہم اپنی ذمہ داریوں کو پورا نہیں کرسکتے ہیں"، دعوی نہیں کرسکتے ہیں کہ " ہمیں نہیں معلوم تھا کہ امریکی پابندیوں سے کیا اثرات مرتب ہوں گے" کیونکہ وہ امریکی نیت سے باخبر تھے اور اپنی حالات سے بھی بخوبی واقف تھے.
274*9393**
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
4 + 12 =