ایران کا خطے میں ہیپاٹائٹس ادویات تیار کرنے میں اہم کردار

  تہران، ارنا- ایرانی یونیورسٹی آف میڈیکل سائسنز بقیہ اللہ کے ایک پروفیسر نے خطے میں ہیپاٹائٹس ادویات کی پیداوری میں ایران کے اہم کردار پر زور دیتے ہوئے کہا ہم ہیپاٹائٹس سی اور بی ادویات کی پیداواری میں خود کفیل ہوگئے ہیں۔

یہ بات ایرانی کی یونیورسٹی آف میڈیکل سائنسز "بقیہ اللہ" میں معدے اور جگر کی بیماری کے تحقیقی مرکز کے سربراہ "موید علویان" نے ارنا نمائندے کیساتھ گفتگو کرتے ہوئے کہی۔

انہوں نے مزید کہا کہ ایرانی دانشوروں نے ہیپاٹائٹس ادویات کو تیار کرلیا ہے جو ملک کیلئے ایک بہت بڑا فخر ہے۔

علویان نے کہا کہ اسلامی جمہوریہ ایران میں گزشتہ سالوں سے اب تک ہیپاٹائٹس ویکسنز تیار ہوتی جار رہی ہیں جو اب تک صرف خطے کے بہت کم ممالک ان کو تیار کر سکتے ہیں۔

یہ بات قابل ذکر ہے کہ گزشتہ دنوں میں بھی نائب ایرانی وزیر صحت "رضا ملک زادہ" نے کہا تھا کہ اسلامی جمہوریہ ایران ہیپاٹائٹس سی کی ادویات تیار کرنے میں خود کفیل ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ عالمی ادارہ صحت کے احکامات کے مطابق 2030 تک ہیپاٹائٹس سی کی بیماری کا خاتمہ کرنا ہوگا۔

ڈاکٹر ملک زادہ نے کہا کہ اسلامی جمہوریہ ایران نے ہیپاٹائٹس سی کی بیماری کے خاتمے کے لئے منصوبہ بندی کی ہے اور اس کی ادویات ملک میں تیار کی جاتی ہیں جو انشورنس سے بھی احاطہ کرتا ہے.

انہوں نے کہا کہ ہیپاٹائٹس سی کی ادویات کی تیاری کے پہلے مرحلے میں 1400 بیماروں سے 98 فیصد کا علاج کئے گئے.

نائب ایرانی وزیر صحت نے کہا کہ ہم ملک بھر میں ہیپاٹائٹس سی کی بیماری کے خاتمے کے لئے بھرپور کوشش کر رہے ہیں.

**9467
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
9 + 3 =