ایران اور چین کے درمیان تعلقات کی تاریخ شاہراہ ریشم کی قدمت سے متعلق ہے

اصفہان، ارنا – چین کے شنگھائی سٹی میونسپل کونسل کے نائب چیئرمین نے کہا ہے کہ اسلامی جمہوریہ ایران اور چین کے درمیان تعلقات کی تاریخ شاہراہ ریشم کی دو ہزار سالہ قدمت سے متعلق ہے.

یہ بات "شاہی لینگ" نے ایرانی تاریخی صوبے اصفہان کے شہری کونسل کے سربراہ "فتح اللہ معین" کے ساتھ ایک ملاقات کے دوران گفتگو کرتے ہوئے کہی.
اس موقع پر انہوں نے کہا کہ ہم صوبے اصفہان کے ساتھ کثیرالجہتی تعلقات کو فروغ دینے کے لئے تیار ہیں.
شاہی لینگ نے کہا کہ شاہراہ ریشم کی قدمت دو ہزار سال ہے جس زمان سے اب تک اسلامی جمہوریہ ایران اور چین کے درمیان دوطرفہ تعلقات قائم ہیں.
انہوں نے دونوں ممالک کے درمیان دیرینہ تعلقات پر زور دیا اور کہا کہ ایران اور چین زبان اور دوسرے طریقوں کے ذریعہ دوطرفہ مواصلات کو فروغ دے سکتے ہیں اور ہم اس راستے میں کوئی کوششوں سے دریغ نہیں کریں گے.
معین نے بھی کہا کہ چین ایک کامیاب ایشیائی ملک اور ایران کے پرانی دوست ملک ہے جو بڑی تعداد میں منصوبوں میں شراکت داری کررہا ہے.
انہوں نے کہا کہ چین نے صوبے اصفہان میں میٹرو لائن کے منصوبے میں اچھی باہمی تعاون کی جس کا گزشتہ سال میں افتتاح کیا گیا.
انہوں نے مزید کہا کہ اسلامی جمہوریہ ایران میں چینی شہریوں کی آمد و رفت کی سہولتیں کی فراہمی کے لئے ویزے کو خاتمے کرنے کی ضرورت ہے.
9393**
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
captcha