انسٹیکس کے تحت پہلی مالی ٹرانزیکشن ہونے جا رہی ہے: مغرینی

تہران، ارنا- یورپی یونین کی خارجہ پالیسی کی خاتون سربراہ نے کہا ہے کہ ایران کیلئے یورپ کا مخصوص مالیاتی نظام انسٹیکس کے تحت پہلی مالی ٹرانزیکشن ہونے جا رہی ہے۔

"فیڈریکا مغرینی" نے انسٹیکس میکنزم پر عمل درآمد کا خیر مقدم کرتے ہوئے کہا کہ 7 یورپی ممالک بھی اس میکنزم میں شامل ہوجائیں گے۔

یورپی یونین کی خارجہ پالیسی کی سربراہ نے کہا ہے کہ جمعہ کے روز کو ایران جوہری معاہدے کی حمایت پر ایک اہم بیان جاری کیا گیا جس میں کہا گیا ہے کہ ایران کیساتھ قانونی تجارتی لین دین کیلئے انسٹکیس مکنیزم نفاذ ہوگیا ہے اور اس کے تحت پہلی مالی ٹرانزیکشن بھی ہونے جار رہی ہے۔

مغرینی نے مزید کہا کہ برطانیہ، فرانس اور جرمنی سمیت 7 دیگر یورپی ممالک نے بھی انسٹیکس میکنزم میں شامل ہوجائیں گے۔

واضح رہے کہ ایران جوہری معاہدے کے مشترکہ کمیشن کے اجلاس کا جمعہ کے روز ویانا میں انعقاد کیا گیا جس میں رکن ممالک کے نائب وزرائے خارجہ اور ڈائریکٹرز جنرل شریک تھے۔

ایرانی وفد کی قیادت نائب وزیرخارجہ سید عباس عراقچی نے کیا جبکہ یورپی یونین کی فارن ایکشن سروس کی سیکریٹری جنرل ہلگا اشمد نشست کی صدارت  کی تھی۔

مشترکہ کمیشن کے اجلاس ایسے وقت میں ہورہا تھا جب یورپ کو دیے جانے والے ایران کی جانب سے الٹی میٹم آئندہ دنوں تک ختم ہوجائے گا.

اسلامی جمہوریہ ایران نے گزشتہ 8 مئی کو یہ فیصلہ کیا تھا کہ جوہری معاہدے کے بعض احکامات پر عمل نہیں کرے گا اور معاہدے کے فریقین کو بھی 60 دن کا الٹی میٹم دیا تا کہ وہ تیل اور بینکاری شعبوں کے علاوہ دیگر امور سے متعلق اپنے وعدوں پر عمل کریں.

جوہری معاہدے سے امریکہ کی غیرقانونی علیحدگی سے ایک سال گزر گیا اور اسی دوران ایران نے صبر و تحمل کا مظاہرہ کرتے ہوئے دیگر فریقین کو اس نقصان کا ازالہ کرنے کا کافی وقت دیا.

**9467
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
6 + 8 =