30 جون، 2019 10:18 AM
Journalist ID: 1312
News Code: 83374647
0 Persons
ایران کا یورپی نظام انسٹیکس پر عدم اطمینان کا اظہار

نیویارک، ارنا - اسلامی جمہوریہ ایران نے یورپ کے مالیاتی نظام انسٹیکس کو بغیر ایندھن کے ایک خوبصورت سواری قرار دیتے ہوئے اس کی موجودہ صورتحال پر عدم اطمینان کا اظہار کیا ہے.

یہ بات  اقوام متحدہ میں تعینات ایرانی مستقل مندوب نے "مجید تخت روانچی" نے گزشتہ روز نیویارک میں غیرملکی صحافیوں کے ساتھ گفتگو کرتے ہوئے کہی.

انہوں نے انسٹیکس  کو ایک بہت اچھی گاڑی مگر کوئی پٹرول کے بغیر کی طرح قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ یورپ کے مالیاتی میکنزم کی موجودہ صورتحال کافی نہیں ہے.

اس موقع پر انہوں نے کہا کہ اسلامی جمہوریہ ایران کی جانب سے جوہری معاہدے کے تحفظ کے لئے اپنے وعدوں پر عمل کرنے کی ضرورت ہے مگر دوسرے فریقین ایران کے مفادات کی فراہمی اور اس معاہدے کے تحفظ کے لئے بھرپور کوشش کریں.

تخت روانچی نے خلیج فارس کے علاقے میں حالیہ تبدلیوں کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ ہم یقین رکھتے ہیں کہ خلیج فارس میں افراتفری کی جڑ امریکہ کی ایران مخالف پالیسیاں ہیں۔ امریکہ جوہری معاہدے سے علیحدہ ہوگیا جس کے بعد اس نے ہمارے ملک کے خلاف پابندیاں عائد کی.

انہوں نے مزید کہا کہ پابندیاں، ایرانی تیل کی فروخت کے چھوٹ لینے کی عدم تجدید، علاقے میں بحری جہازوں کو بھیجنا اور دوسرے اقدامات کا مقصد ایران کو اکسانا ہے مگر ہم نے اب تک تحمل کا مظاہرہ کیا.

ایرانی مندوب نے ملک کی فضائیہ حدود میں امریکی جاسوس ڈرون کی تباہی پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ امریکی ڈرون ایرانی سرحدوں میں قریب آیا ہم نے چار بار کے لئے اس پر انتباہ کیا مگر وہ ہمارے انتباہات کی توجہ کے بغیر ملکی فضائیہ حدود پر داخل ہوگیا لہذا ہم نے اقوام متحدہ کے چارٹ کی شق نمبر 51 کے مطابق، ملکی دفاع کی مبنی پر اسے مار گرایا.

انہوں نے وائٹ ہاؤس کے حکام کی ایران مخالف پالیسیوں کے حوالے سے کہا کہ امریکیوں نے ایران کے خلاف بڑھتے ہوئے دباؤ کی پالیسی کو منصوبہ بندی کیا ہے مگر وہ جاں لیں کہ علاقے میں ان کا مقاصد حاصل نہیں ہوں گے.

تخت روانچی نے کہا کہ بعض امریکی حکام ایرانی حکومت کی تبدیلی چاہتے ہیں اور ان کی جانب سے بڑھتے ہوئے دباؤ کی پالیسی کا مقصد یہ ہے مگر یہ پالیسی نہ صرف اسلامی جمہوریہ ایران اور امریکہ کے درمیان تعلقات بکلہ تمام علاقے میں تنازعات کا باعث ہوگی.

274*9393**

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
2 + 0 =