ایران پر کیمیائی حملہ تاریخ کا ایک سیاہ ترین دن ہے: ظریف

مہاباد، ارنا - ایرانی وزیرخارجہ نے کہا ہے کہ آٹھ سالہ مسلط کردہ جنگ کے دوران ظالم صدام کی جانب سے نہتے ایرانی شہریوں پر ہولناک کیمیائی حملہ تاریخ کا ایک سیاہ ترین دن ہے.

یہ بات محمد جواد ظریف نے کہی جن کے پیغام کو دفترخارجہ کے ترجمان سید عباس موسوی نے ایرانی علاقے سردشت پر صدام کے کیمیائی حملوں کی 32ویں سالگرہ کی مناسبت سے ایک تقریب میں پڑھ کر سنایا.
9 جولائی 1987 کو صدام کی فضائیہ نے سردشت پر فضائی حملے میں کیمیائی بم پھینکا جس میں 130 نہتے افراد جو زیادہ تر کُرد برادری سے تعلق رکھتے تھے، شہید ہوئے اور کئی ہزار لوگ بھی متاثر ہوئے جن میں سے زیادہ تر لوگ آج زندہ تو ہیں مگر اس کے اثرات سے تکلیف میں ہیں.
ہیروشیما پر امریکہ کے جوہری ہتھیاروں سے حملے کے بعد ایرانی شہر سردشت دنیا کا دوسرا علاقہ جہاں ہولناک ترین کیمیائی حملہ ہوا.
ایرانی وزیر خارجہ نے اپنے پیغام میں کہا کہ سردشت پر کیمیائی حملہ آٹھ سالہ مسلط کردہ جنگ کا ایک تلخ حصہ ہے جو ہمیں دردناک ترین لمحات کو یاد دلاتا ہے.
انہوں نے مزید کہا کہ ظالم آمر صدام نے ایرانی فوجی اہلکار اور سویلین پر بے دردی سے کیمیائی حملے کئے جن پر عالمی برادری، اقوام متحدہ اور سلامتی کونسل خاموش تماشائی بنی رہی مگر ان ہولناک جرائم کے ذمہ داران کے ماتھے پر ذلت کا نشان باقی رہے گا.
ظریف نے کہا کہ 29 جون ایران میں کیمیائی اور حیاتیاتی ہتھیاروں کی روک تھام کا قومی دن ہے اور میں اس موقع پر آٹھ سالہ جنگ کے عظیم شہدا، جانبازوں بالخصوص کیمیائی حملوں میں شہید ہونے والے شہریوں کو خراج عقیدت پیش کرتا ہوں.
انہوں نے مزید کہا کہ اسلامی جمہوریہ شرقی، اصولی، اخلاقی اور قانونی لحاظ سے دنیا میں کیمیائی ہتھیاروں کے خاتمے کا علمبردار ہے اور اس کے مکمل خاتمے کے لئے بین الاقوامی معاہدوں کی من و عن پاسداری کا مطالبہ کرتا ہے. امریکہ واحد ملک ہے جو ایسے ہتھیار رکھتا ہے اور ہم ان ہتھیاروں کا مکمل خاتمہ چاہتے ہیں.
محمد جواد ظریف نے کہا کہ امریکہ، ایران پر ظالمانہ پابندیاں لگانے کے نشے میں دھت ہے جس کی وجہ سے ایران میں مختلف امراض میں مبتلا مریض بالخصوص کیمیائی حملوں کے شکار افراد کو ادویات کی فراہمی میں شدید مشکلات کا سامنا ہے. امریکہ کے ایسے اقدامات بین الاقوامی قوانین اور انسانی ہمدری کے اصولوں کی کھلی خلاف ورزی ہے.
انہوں نے مزید کہا کہ ایرانی دفترخارجہ خطے اور بین الاقوامی سطح پر کیمیائی حملوں کا شکار اپنے شہریوں کے کیسز کو سفارتی محاذ پر بھرپور انداز میں اٹھائے گا اور ایرانی عوام کے حقوق کو یقینی بنائے گا.
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
8 + 0 =