26 جون، 2019 10:20 AM
Journalist ID: 1837
News Code: 83370418
0 Persons
ایران کی طرف سے سفارتی راستہ اب بھی کھلا ہے: عراقچی

تہران، ارنا - اعلی ایرانی سفارتکار نے کہا ہے کہ ایران کی جانب سے جوہری معاہدے کے بعض اپنے وعدوں میں کمی لانے کے باوجود ابھی بھی ہم نے سفارتکاری کھڑکی کو کھلا رکھا ہے.

یہ بات نائب ایرانی وزیر خارجہ برائے سیاسی امور 'سید عباس عراق نے گزشتہ روز ایران کے دورے پر آئے ہوئے سلوواکیا کے نائب وزیر خارجہ برائے یورپی امور 'لوکاش پاریزک ' کے ساتھ ایک ملاقات کےدوران گفتگو کرتے ہوئے کہی.
انہوں نے گزشتہ سال کے دوران امریکہ کی ایکطرفہ اور غیر قانونی علیحدگی کے سامنے ایران کے اسٹریٹجک صبر کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ یورپی ممالک جوہرے معاہدے کے حوالے سے اپنی ذمہ داریوں کو پورا نہیں کیا ہے.
انہوں نے مزید کہا کہ بدقسمتی سے اسلامی جمہوریہ ایران کے عہدوں اور حقوق کے درمیان توازن اب ختم ہو چکا ہے اور یورپیوں کے وعدوں پر عمل نہ کرنے کی وجہ سے، ایران کے ایک طرفہ وعدوں کو پورا کرنے کی کوئی وجہ نہیں ہے.
عراقچی نے اپنی تقریر کے دوسرے حصے میں دونوں ممالک کے درمیان سیاسی تعلقات اور مشاورت کے تسلسل پر اپنی اطمینان کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ دونوں ممالک کے اقتصادی اور تجارتی تعلقات میں بہت زیادہ صلاحیتیں موجود ہیں.
اعلی ایرانی سفارتکار نے اس امید کا اظہار کیا کہ آئندہ میں مشترکہ کمیشن کے انعقاد سے باہمی اقتصادی تعلقات کو مزید مضبوط بنانے میں مدد ملے گی.
اس موقع میں سلوواکیا کے نائب وزیر خارجہ نے کہا کہ اپنا ملک ایران کے ساتھ سیاسی، اقتصادی، ثقافتی اور تجارتی تعلقات کے فروغ کیلئے کوشاں اور قریب مستقبل میں مشترکہ کمیشن کے انعقاد کیلئے تیار ہے.
انہوں نے جوہری معاہدے سے اپنا ملک کی حمایت کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ امید ہے کہ انسٹکیس میکنزم کے نفاذ سے یورپ ایران کےساتھ تجارتی روابط کو جاری رکھے گا.
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
3 + 14 =