ایران میں امریکی ڈرون کی تباہی، تیل کی قیمتوں میں اضافہ

تہران، ارنا – گزشتہ ہفتوں کے دوران تیل کی قیمت میں کمی آئی تھی مگر حالیہ دنوں میں مشرق وسطی اور خلیج فارس کے علاقے میں بڑھتے ہوئے تنازعات کی وجہ سے اس کی قیمت میں ایک بار پھر اضافے کا رحجان دیکھا جا رہا ہے.

رواں سال کے ابتدا سے تیل کی قیمت میں سب سے زیادہ مہنگائی دیکھا جا رہا ہے۔
ایسا لگتا تھا کہ مشرق وسطی میں تنازعات تیل کی قیمت میں کوئی اثر نہیں پڑے گا مگر جمعرات کے روز امریکی ڈرون کی ملکی فضائی حدود کی خلاف ورزی اس کی قیمت کی مہنگائی کا باعث ہوگیا۔
گزشتہ ہفتے کے دوران تیل کی قیمت میں 60 ڈالر تک کمی آئی تھی اور ماہرین نے یقین رکھتے تھے کہ تیل کی قیمت 40 ڈالر تک کمی آنا ممکن ہے۔
امریکی ڈرون کی ایرانی فضائی حدود کی خلاف ورزی کی وجہ سے کچھ حد تک، قیمتوں کی کمی کے خدشات ختم ہوگیا ہیں۔
اس واقعات کے نتیجے میں تیل کی قیمتوں میں اضافہ دیکھنے میں آ رہا ہے اور جمعہ کے روز اس کی قیمت 65 ڈالر سے زائد پہنچ گئی۔
تیل کی قمیتوں میں کمی آنے کے لئے سعودی عرب پر امریکی دباؤ کے باوجود مگر ایسا لگتا ہے کہ سعودی عرب اس کی پیداواری کی کمی کے معاہدے کی تجدید کا خواہاں ہے۔
موسم گرما کے خاتمے اور موسم سرما کی آمد کے ساتھ تیل کی ضروریات بڑھ جائے گی جس کی وجہ سے اس کی قیمتوں میں اضافے کا رجحان دیکھا جائے گا۔
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
7 + 2 =