ایران مخالف امریکی الزامات خطے کے مفاد میں نہیں: پاکستانی سیاستدان

اسلام آباد، ارنا - پاکستان میں حکمران جماعت تحریک انصاف سے تعلق رکھنے والی خاتون رکن پارلیمنٹ نے کہا ہے کہ خلیج فارس کے حالیہ واقعات کے حوالے سے ایران کے خلاف امریکی الزامات علاقائی مفادات کے منافی ہیں.

«شندانہ گلزار خان» نے ہفتہ کے روز ارنا نیوز کے نمائندے سے خصوصی گفتگو کرتے ہوئے مزید کہا کہ امریکی الزامات در اصل خطے کے خلاف ہیں بلکہ ان سے عدم استحکام کی صورتحال پیدا ہوگی.
انہوں نے اینٹی ایران امریکی الزامات کو بین الاقوامی تعلقات کے برعکس قرار دیتے ہوئے کہا کہ بغیر کسے ثبوت اور تحقیق کے ایک ملک پر الزام لگانا عالمی نظم و ضبط اور قوانین کی خلاف ورزی ہے.
خاتون پاکستانی سیاستدان کا کہنا تھا کہ ہر ملک کو عالمی مسائل کے حوالے سے اپنے دفاع کا حق ہے اور اسلامی جمہوریہ ایران نے بھی حالیہ امریکی الزامات کو مسترد کرتے ہوئے شفاف تحقیقات کا مطالبہ کر رکھا ہے جسے دنیا کے مخالف ممالک بالخصوص پاکستان کی حمایت حاصل ہے.
انہوں نے ایران جوہری معاہدے سے امریکہ کی یکطرفہ علیحدگی کا ذکر کرتے ہوئے مزید کہا کہ یہ ایک مثالی معاہدہ تھا جس پر تمام فریقین نے جد و جہد کی تاہم امریکی علیحدگی کسی کے فائدے میں نہیں.
رکن پاکستانی اسمبلی نے اس بات پر زور دیا کہ عالمی برادری کو چاہئے کہ ایک ایسا موثر سفارتی اور قانونی نظام بنائے جس کے ہوتے ہوئے کوئی بھی ملک عالمی قوانین اور معاہدوں کی خلاف ورزی نہ کرسکے.
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
4 + 3 =