کسی بھی دراندازی کا منہ توڑ جواب دینے کیلئے آمادہ ہیں: ایران

نیو یارک، 21 جون، ارنا - اسلامی جمہوریہ ایران نے اقوام متحدہ میں جاسوس امریکی ڈرون کی ملکی فضائی حدود کی خلاف ورزی کے ردعمل میں کہا ہے کہ ایران جنگ نہیں چاہتا تاہم کسی بھی جارحیت کے خلاف اپنا بھرپور دفاع کرے گا.


اقوام متحدہ میں تعینات ایران کے مستقل مندوب «مجید تخت روانچی» نے سربراہ اقوام متحدہ کے نام ایک خصوصی مراسلے میں انھیں امریکی ڈرون کے غیرقانونی طور ایرانی حدود میں داخلے سے متعلق تفصیلات سے آگاہ کیا.
انہوں نے اس حوالے سے ایرانی صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے بتایا کہ ہم نے بارہا کہا کہ جنگ نہیں چاہتے مگر کسی بھی دراندازی کے سامنے بھرپور دفاع کرنے کے لئے تیار ہیں.
تخت روانچی کے مطابق، اسلامی جمہوریہ ایران نے عالمی برادری سے بھی مطالبہ کیا ہے کہ وہ مستقبل میں امریکہ کے ایسے غیرقانونی اقدامات کو روکنے کے لئے قدم اٹھائے.
انہوں نے مزید کہا کہ ایران نے سربراہ اقوام متحدہ اور صدر سلامتی کونسل کو خصوصی مراسلے کے ذریعے حالیہ صورتحال سے آگاہ کیا ہے اور جلد اس حوالے سے یو این سیکریٹریٹ کے حکام سے بھی ملاقات کریں گے.
ایرانی مندوب نے کہا کہ ہم نے ان خطوط میں عالمی قوانین کے تحت تمام ثبوت فراہم کئے اور بھی کہا گیا ہے کہ ایران کی طرف سے دراندازی کرنے والے ڈرون کو پہلے کئی بار انتباہ کیا مگر کوئی رد عمل نہیں کیا اسی لئے ایران اقوام متحدہ کے منشور کی شق 51 کے تحت اپنا دفاع کرتے ہوئے جاسوس امریکی ڈرون کو مارگرایا.
274**9393*
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
7 + 6 =