امریکہ نے ممالک کی قومی پہچان اور حاکمیت کا نشانہ بنایا ہے: ایڈمیرل شمخانی

ماسکو، 18 جون، ارنا - ایران کی اعلی قومی سلامتی کونسل کے سیکریٹری نے کہا ہے کہ امریکہ کی نئی دہشتگردانہ پالیسیوں سے ممالک کی ممالک کی قومی شناخت اور حاکمیت کا نشانہ بنایا گیا ہے.

یہ بات ایڈمیرل علی شمخانی نے آج بروز منگل روسی شہر اوفا میں سیکورٹی سے متعلق بین الاقوامی دسواں اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہی.
انہوں نے مزید کہا کہ آج سیکورٹی دھمکیوں کی نوعیت، شکل اور انداز بدل گئی ہے اور بدقسمتی سے دنیا میں ہم نئی اور ہائبرڈ دھمکیوں کے تیز رفتار پھیلاؤ کا مشاہدہ کر رہے ہیں.

انہوں نے اپنی تقریر میں امریکہ کیجانب سے ممالک کی قومی سیکورٹی، استحکام اور ترقی کو خطرے میں ڈالنے والی پابندیوں کے ساتھ مقابلہ کے لیے کئی تجاویز پیش کی جو حسب ذیل ہیں:

1- ڈالر کی اجارہ داری کے خاتمے کے لیے اجتماعی تعاون اور امریکی کنٹرول سے باہر عالمی مالیاتی اور بینکنگ کے نظام میں آزادی کا قیام کرنا.

2- بین الاقوامی امن اور سلامتی کے قیام کے مقصد کے لیے امریکی مداخلت، غندہ گردی کے سامنے مزاحمت کرنا.

3- دوسرے ممالک کے خلاف امریکی پابندیوں سے لڑنا اور ان پابندیوں کو تسلیم نہ کرنا.
4- امریکہ کی نئی سیکورٹی دھمکیوں سے شکار ہونے والے ممالک کو مدد کرنا.
تفصیلات کے مطابق، ایڈمیرل شمخانی آج بروز منگل روس کی اعلی قومی سلامتی کونسل کے سکریٹری 'پیٹروشف' کی باقاعدہ دعوت پر عالمی سلامتی امور کے اعلی نمائندوں کے دسویں اجلاس میں شرکت کے لئے روس کے دورے پر روانہ ہو گئے۔

عالمی سکیورٹی اجلاس آج سے 2 دن تک جاری رہے گا۔

واضح رہے کہ ماسکو میں منعقد ہونے والا اس اجلاس میں 70 ممالک کے سیکورٹی حکام شریک ہیں.

9410٭٭
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
2 + 11 =