جوہری معاہدے کا اختتام، خطے اور دنیا کے مفادات میں نہیں ہے: ایرانی صدر

تہران، 17 جون، ارنا-  ایرانی صدر نے کہا ہے کہ فرانس کے پاس ابھی بھی وقت باقی ہے تا کہ ایران جوہری معاہدے کے دیگر فریقین کیساتھ اس بین الاقوامی معاہدے کے تحفظ کیلئے اپنا کردار ادا کرے کیونکہ یقینا جوہری معاہدے کا اختتام، ایران اور فرانس سمیت خطے اور دنیا کے مفادات میں نہیں ہے۔

ان خیالات کا اظہارڈاکٹر "حسن روحانی" نے ایران میں تعینات فرانس کے نئے سفیر"فیلیپ تی یبو" کیساتھ ایک ملاقات میں گفتگو کرتے ہوئے کیا۔

اس موقع پر فرانسیسی سفیر نے صدر روحانی کو اپنی تقرری کی اسناد پیش کیں۔

ہونے والے ملاقات میں ایرانی صدر نے کہا کہ تہران اور پریس، مستقبل میں باہمی تعلقات کا سلسلہ جاری رکھنے کے حوالے سے مضبوط عزم و ارادہ رکھتے ہیں اور اسی لئے دونوں ملکوں کے درمیان طے پانے والے معاہدات پر عمل کرنا ناگزیر ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ ایران، تمام شعبوں بالخصوص اقتصادی میدان میں فرانس کیساتھ تعلقات کے فروغ کا خواہاں ہے۔

صدر روحانی نے کہا کہ ہمیں ایران اور فرانس کے تعلقات کی توسیع کی راہ میں کسی کو خلل ڈالنے کی اجازت نہیں دینی چاہیے۔

ایرانی صدر نے جوہری معاہدے سے امریکی علیحدگی کے بُرے اثرات کا ازالہ کرنے کے حوالے سے یورپی یونین اور فرانس کی در خواست کے مطابق گزشتہ سال کے دوران ایرانی صبر و تحمل کے مظاہرہ پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ فرانس کے پاس ابھی بھی وقت باقی ہے تا کہ ایران جوہری معاہدے کے دیگر فریقین کیساتھ اس بین الاقوامی معاہدے کے تحفظ کیلئے اپنا کردار ادا کرے کیونکہ یقینا جوہری معاہدے کا اختتام، ایران اور فرانس سمیت خطے اور دنیا کے مفادات میں نہیں ہے۔

انہوں نے کہا کہ تہران، جوہری معاہدے سے متعلق اپنے کیے گئے وعدوں پر عمل کرنے سمیت، خطے میں قیام امن و استحکام اور انسداد دہشتگردی کے حوالے سے پریس کیساتھ مشترکہ تعاون پر تیار ہے۔

 اس موقع پر فرانس کے نئے سفیر نے دونوں ملکوں کے درمیان تعلقات کے فروغ پر زور دیتے ہوئے کہا کہ ان کا ملک ایران کیساتھ اقتصادی تعلقات کی توسیع کیلئے کسی بھی کوشش سے دریغ نہیں کرے گا۔

انہوں نے مزید کہا کہ ایران، جوہری معاہدے سے متعلق اپنے کیے گئے وعدوں پر پوری طرح عمل کیا ہے اور فرانس بھی اس بین الاقوامی معاہدے کے تحفظ کیلئے کوشاں ہے۔

فرانسیسی سفیر نے خطے میں بڑھتی ہوئی کشیدگی پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ ان کا ملک علاقے میں قیام امن و استحکام کے حوالے سے کردار ادا کرنے پر تیار ہے۔

**9467
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
1 + 6 =