چین نے ایک بار پھر ایران جوہری معاہدے کے تحفظ پر زور دیا

بیجنگ، 14 جون، ارنا – چینی صدر 'شی جن پنگ' نے بیشکک میں شنگھائی تعاون تنظیم کے 19 ویں اجلاس کے موقع پر ایران اور عالمی طاقتوں کے درمیان طے پانے والے جوہری معاہدے کے تحفظ پر زور دیا.

ایرانی صدر مملکت جو شنگھائی تعاون تنظیم کے 19 ویں اجلاس کی شرکت کیلئے قازقستان کے دورے پر ہے آج بروز جمعہ چینی صدرکے ساتھ ملاقات کرتے ہوئے جوہری معاہدے کے بچانے پر زور دیا۔

انہوں نے ایران و چین کے درمیان طویل المدتی اور دیرینہ تعلقات کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ چین ایران کیساتھ باہمی تعلقات کے فروغ پر زور دیا۔

چینی صدر نے مزید کہا کہ ہم ایران کیساتھ سائنسی اور دہشتگردی کے خلاف جنگ کے شعبوں میں باہمی تعاون بڑھانے کے خواہاں ہے۔
اس موقع پر صدر روحانی نے کہا کہ ایران ایک بیلٹ - ایک سڑک کے منصوبے کے فروغ پر دلچسبی رکھتا ہے اور جوہری معاہدے سے امریکہ کی ایک طرفہ علیحدگی کی مخالفت کرتا ہے۔
شنگھائی سمٹ کا سربراہی اجلاس آج منعقد ہوا جس میں اسلامی جمہوریہ ایران سمیت منگولیا، افغانستان اور بیلاروس بحیثیت مبصر شریک تھے.
اس اجلاس میں چین، روس، قازقستان، تاجکستان، کرغزستان، پاکستان، ازبکستان اور بھارت کے سربراہان بھی بحیثیت مستقل رکن نے شرکت کی.
ایرانی صدر شنگھائی تنظیم میں شرکت کے بعد تاجکستان جائیں گے جہاں وہ ایشیا میں باہمی تعاون اور اعتماد سازی کی تنظیم (CICA) کے اجلاس میں شریک ہوں گے.
9410٭274٭٭
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
9 + 8 =