امریکہ کیخلاف ایران اور چین کی مزاحمت میں دنیا کا فائدہ ہے: روحانی

تہران، 14 جون، ارنا - ایرانی صدر نے اپنے چینی ہم منصب کے ساتھ ایک ملاقات میں کہا ہے کہ دونوں ممالک کا امریکہ کے یکطرفہ اقدامات کے سامنے ڈٹ جانا ایشیائی خطے اور تمام دنیا کے لئے فائدہ مند ہے.

ڈاکٹر «حسن روحانی» نے جمعہ کے روز کرغز دارالحکومت بشکیک میں جاری شنگھائی تنظیم کے سربراہی اجلاس کے موقع پر چین کے صدر «شی جن پنگ» سے ملاقات کی.
انہوں نے چین کے ساتھ دوطرفہ تعلقات کے فروغ کا خیرمقدم کرتے ہوئے دونوں ملکوں کے درمیان توانائی، صنعت اور ٹرانسپورٹیشن کے مشترکہ منصوبوں میں تعاون کی توسیع پر زور دیا.
انہوں نے اس بات پر زور دیا کہ ایران کے چین کے ساتھ تعلقات کو ہمیشہ اسٹریٹجک اہمیت حاصل ہے اور رہے گی.
ایرانی صدر نے مزید کہا کہ تہران نے ہمیشہ جوہری معاہدے پر من و عن عمل کیا تاہم امریکہ بغیر کسی دلائل سے اس معاہدے سے یکطرفہ طور پر نکل گیا.
انہوں نے بتایا کہ امریکہ ایشیا اور پوری دنیا پر غلبے کے لئے ایران اور چین پر دباؤ ڈال رہا ہے لہذا امریکی اقدامات کے خلاف ہماری مشترکہ مزاحمت سے ایشیا اور دنیا کو فائدہ ملے گا.
ڈاکٹر روحانی نے مزید کہا کہ ایرانی قوم نے یہ ثابت کردیا ہے کہ وہ نہ صرف امریکی دباو کے سامنے سرینڈر نہیں کرتی بلکہ مزید مضبوط اور متحد رہتی ہے.
اس نشست میں چینی صدر نے ایران کے ساتھ تعلقات کو مزید بڑھانے کے عزم کا اعادہ کرتے ہوئے کہا کہ امریکہ کی جوہری معاہدے سے علیحدگی علاقائی کشیدگی کی اصل وجہ ہے.
انہوں نے بتایا کہ چین، ایران کے ساتھ انسداد دہشتگردی اور منظم جرائم کی روک تھام کے حوالے سے قریبی تعاون بڑھانے کے لئے آمادہ ہے.

9410٭274٭٭
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
8 + 10 =