ایرانی جنوبی علاقوں میں جاپان کی سرمایہ کاری، باہمی تعلقات کے فروغ کا باعث ہوگی: صدر روحانی

تہران، 12 جون، ارنا- اسلامی جمہوریہ ایران کے صدر ممکلت نے جاپان کے وزیر اعظم کیساتھ ایک ملاقات میں کہا ہے کہ ایران کے جنوبی علاقوں میں سرمایہ کاری کیلئے جاپان کی دلچسبی، دونوں ملکوں کے درمیان تعلقات کے فروغ کا باعث ہوگی۔

ڈاکٹر حسن روحانی نے بدھ کی رات ایران کے دورے پر آئے ہوئے جاپان کے وزیر اعظم "شنزو ابے" کیساتھ ایک پریس کانفرنس کے دوران، ایران اور جاپان کے تاریخی تعلقات پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ اس سال دونوں ملکوں کے درمیان ڈپلومٹیک تعلقات کی 90 ویں سالگرہ ہے۔

انہوں نے گزشتہ سالوں میں جاپان کے وزیر اعظم کیساتھ اپنی تعمیری ملاقاتوں پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ اب تک انہوں نے شنزو ابے کیساتھ آٹھ ملاقاتیں کی ہیں۔

صدر روحانی نے خطے اور دنیا میں سیاسی اور اقتصادی تعلقات کی توسیع کے حوالے سے جاپانی حکومت بالخصوص جاپان کے وزیر اعظم کے مضبوط عزم و ارادے کا خیر مقدم کیا۔

انہوں نے مزید کہا کہ ایران اور جاپان کے کے درمیان وفود کی سطح پر اجلاس کے موقع پر باہمی تعلقات کے مسائل بشمول ایران کے جنوبی سواحل مکران اور چابہار میں جاپان کی سرمایہ کاری کے حوالے سے بات چیت ہوئی۔

صدر روحانی نے مزید کہا کہ ہم جاپانی کیجانب سے ایرانی تیل کی خریدای سمیت تعلیمی اور ثقافتی شعبوں میں تعاون اور باہمی مالی مسائل کے حل پر جاپان کی دلچسبی کا خیر مقدم کرتے ہیں۔

انہوں نے ایران اور جاپان کے درمیان تاریخی تعلقات پر تبصرہ کرتے ہوئے  کہا کہ اسلامی جمہوریہ ایران کیساتھ تمام شعبوں میں تعاون کے فروغ کے حوالے جاپانی حکومت کے مضبوط عزم و ارادے کا خیر مقدم کرتا ہے۔

صد روحانی نے  کہا کہ جاپانی وزیر اعظم کیساتھ ملاقات میں باہمی مسائل سمیت خطے میں قیام امن اور کشیدگی کو ختم کرنے کے حوالے سے مذکرات کیا گیا۔

انہوں نے مزید کہا کہ ہمارے لیئے خوشی کی بات ہے کہ دونوں ممالک، خطے میں پایدار امن و سلامتی کو قائم کرنے کی بہت بڑی اہمیت دیتے ہیں۔

ایرانی صدر نے کہا کہ خطے کے مسائل کے حوالے سے جاپانی وزیر اعظم کا نقطہ نظر انتہائی مثبت اور تعمیری ہے۔

انہوں نے جاپان کیجانب سے ایران جوہری معاہدے کی حمایت کا تسلسل اور خطے کیلئے اس بین الاقوامی معاہدے کی اہمیت کے حوالے سے جاپان کی تعمیری رویے سے خوشی کا اظہار کردیا۔

ڈاکٹر حسن روحانی نے مزید کہا کہ اسلامی جمہوریہ ایران، جوہری معاہدے پر قائم رہنے میں دلچسبی رکھتا ہے اور ہمارے آئندہ اقدامات بھی بالکل اس بین الاقوامی معاہدے کے اصولوں کے مطابق ہوں گے۔

انہوں نے کہا کہ ہم دونوں ملکوں کے درمیان جوہری شعبے میں امن پسندانہ تعاون کے خواہاں ہیں۔

صدر روحانی نے مزید کہا کہ در اصل خطے میں حالیہ کشیدگی کی اصل جڑ،ایران مخالف امریکی معاشی جنگ ہے اور جب یہ جنگ روکا جائے تب خطے اور دنیا میں اچھی اور مثبت تبدیلیاں رونما ہوں گی۔

انہوں نے اس امید کا اظہار کردیا کہ جاپانی وزیر اعظم کا حالیہ دورہ ایران، دونوں ممالک کے درمیان تعلقات کے فروغ سمیت علاقے میں مثبت تبدیلیوں کے حوالے سے ایک اہم سنگ میل ثابت ہوگا۔

صدر روحانی نے مزید کہا کہ جاپانی وزیر اعظم کیساتھ ملاقات میں پناہ گزینوں، منشیات کے خلاف جنگ، انسداد دہشتگردی، شام کی تعمیر نو اور یمنی بحران کے حل کے امور پر تبادلہ خیال کیا گیا ہے۔

**9467

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
7 + 0 =