جوہری معاہدہ: ایران نہیں یورپ اپنے وعدوں پر قائم رہے: ترجمان

تہران، 12 جون، ارنا - ایرانی دفترخارجہ کے ترجمان نے کہا ہے کہ جوہری معاہدے سے متعلق یورپی فریقین کو اگر خدشات ہیں تو انھیں چاہئے کہ وہ ایران پر نکتہ چینی کے بجائے اپنے وعدوں کی پاسداری کریں.

«سید عباس موسوی» نے جرمن وزیر خارجہ کے دورہ اسٹاک ہوم کے موقع پر دیے جانے والے بیانات کے ردعمل میں مزید کہا کہ عالمی برادری اور یورپ کے نزدیک جوہری معاہدے کی اہمیت سے متعلق جرمنی کے مؤقف سے اتفاق کرتے ہیں تاہم عمل درآمد کے حوالے سے ایران سے متعلق ان کا نظریہ سمجھ سے بالاتر ہے.
انہوں نے کہا کہ یورپی فریق یکطرفہ طور پر ایران سے معاہدے پر عمل درآمد کا مطالبہ کرتا ہے جبکہ اس معاہدے میں کئی فریق شامل ہیں اور سب کو چاہئے کہ برابری کی سطح پر اس پر عمل کریں تاہم اگر وہ ایسے کرنے میں قاصر ہیں تو ایران کو جوہری معاہدے کے تحت حاصل اختیارات کے مطابق اپنی حکمت عملی تیار کرنے کا حق ہے.
موسوی نے مزید کہا کہ ہم یورپی فریق بشمول جرمن وزیر خارجہ کو تجویز دیتے ہیں کہ ایک بار پھر جوہری معاہدے کی شق نمبر 36 کا مطالعہ کریں اور قانونی پہلووں پر ازسرنو غور کریں.
انہوں نے بتایا کہ یورپی فریقین کو چاہئے کہ ایران سے متعلق خدشہ ظاہر کرنے کے بجائے اپنی ذمہ دارایاں پوری کریں.
9410٭274٭٭
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
9 + 1 =