جاپانی وزیراعظم ایران سے بات چیت اور خطی صورتحال میں بہتری کیلئے پُرامید

بیجنگ، 12 جون، ارنا - جاپانی وزیراعظم نے دورہ ایران پر روانگی سے پہلے اس امید کا اظہار کیا ہے کہ ایرانی قیادت سے بات چیت کے بعد مشرق وسطی میں کشیدگی میں کمی آئے گی.

«شنزو ابے» نے ٹوکیو سے تہران روانگی سے پہلے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے مزید کہا کہ ہمیں امید ہے کہ ایرانی رہنماؤں سے ملاقاتوں کے بعد ایسا نتیجہ نکل آئے جس سے مشرق وسطی میں موجودہ کشیدگی کا خاتمہ ہوسکے.

شنزو ابے جو گزشتہ چار دہائیوں کے بعد جاپان کے پہلے وزیر اعظم ہیں جو ایران کا دورہ کر رہے ہیں، خطے میں کشیدگی کو کم کرانے کیلئے ایران اور جاپان کے درمیان دیرینہ تعلقات کی صلاحیتوں سے استفادہ کرنے کا ارادہ رکھتے ہیں.
ان کا کہنا تھا کہ وہ 'نظریات کا واضح تبادلے سے خطے کی کشیدگی کو کم کرانا چاہتے ہیں.
جاپانی وزیر اعظم نے کہا کہ عالمی برادری کو مشرق وسطی میں کشیدگی میں اضافے پر تشویش ہے لہذا جاپان خطے میں قیام امن و استحکام کیلئے ہر ممکن سطح پر اپنے تعمیری کردار ادا کرنا چاہتا ہے.
تفصیلات کے مطابق جاپانی وزیر اعظم آج ایران پہنچیں گے. توقع کی جاتی ہے کہ شنزو ابے اس دورے میں اعلی ایرانی قیادت بشمول سپریم لیڈر آیت الله سیدعلی خامنہ ای کے ساتھ ملاقاتوں میں دوطرفہ تعلقات، علاقائی صورتحال اور بین الاقوامی امور پر تبادل خیال کریں گے.
9410٭274٭٭
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
1 + 9 =