ایران پر مسلط کردہ امریکہ کی معاشی جنگ بہت خطرناک ہے: ظریف

تہران، 10 جون، ارنا - ایرانی وزیر خارجہ نے اپنے ہم جرمن ہم منصب کے ساتھ پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا ہے کہ اسلامی جمہوریہ ایران کے خلاف امریکہ کی معاشی جنگ خطے اور عالمی نظم و ضبط کے لئے بہت خطرناک ہے.

ظریف پیر کے روز تہران میں جرمنی کے وزیر خارجہ کے ساتھ خصوصی ملاقات کے بعد ایک مشترکہ پریس کانفرنس میں حاضر ہوئے.

اس موقع پر انہوں نے اپنے جرمن ہم منصب اور ان کے ہمراہ وفد کو خوش آمدید کہتے ہوئے کہا کہ ہم نے آج جرمن وفد کے ساتھ اچھے اور طویل مذاکرات کئے ہیں.

ظریف نے کہا کہ اسلامی جمہوریہ ایران، جرمن اور یورپی یونین کے درمیان مشترکہ مقاصد سمیت جوہری معاہدے کا تحفظ، علاقے میں تنازعات اور کشیدگی کو روکنا اور جوہری معاہدے کے مفادات سے ایرانی قوم کا فائدہ اٹھانا موجود ہیں.

انہوں نے مزید کہا کہ امریکہ نے ایران کے خلاف معاشی جنگ کا اعلان کردیا ہے اور یہ جنگ خطے اور عالمی نظم و ضبط کے لئے بہت ہی خطرناک ہے.

انہوں نے کہا کہ امریکہ نے جوہری معاہدے سے علیحدگی کے بعد ایرانی قومی کو نشانہ بنایا ہے مگر ہمارے عوام کسی اور سے زیادہ فائدہ اٹھانا تھا.

انہوں نے اس بات پر زور دیا کہ اسلامی جمہوریہ ایران نے ثابت کردیا کہ اپنے وعدوں پر قائم ہے اور عالمی ایٹمی توانائی ایجنسی کی 15 رپورٹ اس بات کی نشاندہی کر رہا ہے.

ایرانی وزیر خارجہ نے کہا کہ جیسا کہ ہمارے ملک اپنے وعدوں پر قائم ہے اپنے عوام کے حقوق کے دفاع اس کی ذمہ داری ہے جسے جوہری معاہدے کی شق نمبر 36 میں منظور کرلیا گیا ہے.

انہوں نے کہا کہ ایران کے نئے اقدامات بالکل جوہری معاہدے کی شق نمبر 36 کے مطابق ہے۔ ہم دوسرے فریقین کے عملی اقدامات کے مطابق اپنے کاروائیوں کو روک یا واپس کرسکتے ہیں.

ظریف نے کہا کہ ہم نے آج علاقائی اور بین الاقوامی مسائل پر بات چیت کی اور ہمیں امید ہے کہ جرمن اور 4+1 ممالک جوہری معاہدے کے تحفظ کے لئے بھرپور کوشش کریں گے اور ہم ان کے ساتھ باہمی تعاون کے لئے تیار ہیں.

274*9393**

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@


آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
2 + 15 =