جاپانی وزیراعظم کا دورہ ایران دوطرفہ تعلقات میں اہم سنگ میل قرار

بیجنگ، 10 جون، ارنا - جاپان میں تعینات اسلامی جمہوریہ ایران کے سفیر نے کہا ہے کہ وزیراعظم شنزو ابے کا آئندہ دورہ تہران دونوں ملکوں کے قریبی تعلقات میں ایک اہم سنگ میل ثابت ہوگا.

«مرتضی رحمانی موحد» نے پیر کے روز ارنا نیوز ایجنسی سے خصوصی گفتگو کرتے ہوئے وزیراعظم جاپان کے آئندہ دورہ ایران پر روشنی ڈالی اور کہا کہ اس دورے کو بڑی اہمیت حاصل ہے جبکہ اسلامی انقلاب کی کامیابی کے بعد یہ کسی بھی جاپانی وزیراعظم کا پہلا دورہ ایران ہوگا.
انہوں نے کہا کہ ایران جاپان تعلقات تاریخی اور مضبوط ہیں اور آئندہ دورے کی مدد سے دونوں ممالک باہمی تعلقات اور تعاون کو مزید بڑھائیں گے.
ایرانی سفیر نے مزید بتایا کہ یہ دورہ صدر مملکت ایران کی دعوت پر ہو رہا ہے، جاپان کے امریکہ کے ساتھ قریبی تعلقات نے اس دورے کو مزید اہمیت دی ہے.
انہوں نے کہا کہ خطے میں امن اور کشیدگی کا خاتمہ ایران کی اصولی پالیسی ہے، جاپان کے ایران اور امریکہ سے اچھے تعلقات ہیں لہذا ہم کشیدگی کے خاتمے کے مقصد سے ہر موثر کوشش کا ساتھ دیں گے.
رحمانی موحد نے مزید کہا کہ امریکہ نے یکطرفہ اور غیرقانونی اقدامات کے ذریعے مشرق وسطی کے خطے میں کشیدگی میں اضافہ کیا ہے، خلیج فارس میں امریکہ کی بڑھتی ہوئی فوجی موجودگی نے بھی اس صورتحال کو پیچیدہ کیا ہے لہذا ہم ہر وہ کوشش جس سے امریکی مداخلت میں کمی ہو، کا خیرمقدم کرتے ہیں.
انہوں نے اس بات پر زور دیا کہ ہمیں مشترکہ خدشات کے خاتمے اور خلیج فارس کے ممالک سے بات چیت کے لئے امریکہ کی کوئی ضرورت نہیں تاہم جاپان ایک اہم پوزیشن کا مالک ہے اور ہم سمجھتے ہیں کہ وہ اس لحاظ سے موثر کردار ادا کرسکتا ہے.
ایرانی سفیر نے کہا کہ ایرانی تیل کی خریداری سے متعلق جاپانی حکومت کے ساتھ مذاکرات جاری رہیں اور ہمیں امید ہے کہ جاپان کی جانب سے تیل خریداری کے سلسلے کا پھر سے آغاز ہوگا.
9410٭274٭٭
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
3 + 7 =