ایران اور تاجکستان کا توانائی شعبے میں باہمی تعاون کی توسیع پر اتفاق

تہران، 1 جون، ارنا - تاجکستان کے وزیر خارجہ کے دورہ اسلامی جمہوریہ ایران کے موقع پر دونوں ممالک نے توانائی کے شعبے میں تعاون بالخصوص بجلی کی ترسیل کو بڑھانے پر اتفاق کیا ہے.

یہ فیصلہ ایرانی وزیر توانائی اور تاجک وزیر خارجہ کے درمیان ایک ملاقات میں کیا گیا.
"رضا اردکانیان" نے کہا ہے کہ دنیا کے 15 فیصد پن بجلی کا حصہ تاجکستان میں موجود ہے لہذا ایران اس حوالے سے تاجکستان کے ساتھ بجلی کی ترسیل پر تعاون بڑھانےکے لئے آمادہ ہے.
انہوں نے مزید کہا کہ اس تعاون کا مقصد خطے میں معاشی سرگرمیوں کے لئے بنیادی ڈھانچوں کی فراہمی ہے.


اردکانیان نے دونوں ممالک کے درمیان کثیرالجہتی تعلقات کو فروغ پر زور دیا اور کہا کہ اسلامی جمہوریہ ایران اور تاجکستان کے درمیان اسٹریٹجک تعلقات قائم ہیں.


انہوں ںے مزید کہا کہ دونوں ممالک کے صدور اور ایرانی کمپنیوں کی صلاحیتوں کی مبنی پر باہمی تعاون بڑھانے کے لئے تمام صلاحیتوں سے استعمال کرنے کی ضرورت ہے.


ایرانی وزیر توانائی نے تمام پڑوسیوں کے ساتھ بجلی اور پانی کے شعبوں میں باہمی تعلقات کو فروغ کے مواقع کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ ہمارا ملک زمینی سرحدی ممالک کے ساتھ توانائی کے تبادلے کے لئے پر عزم ہے اور ہم ایرانی بجلی کو جمہوریہ آذربائیجان، آرمینیا اور جارجیا کے ذریعہ روس کو منتقل کریں گے.


انہوں نے کہا کہ ایرانی وزرات توانائی تاجکستان، روس، افغانستان اور آرمینیا کے ساتھ مشترکہ اقتصادی اور تجارتی کمیشن کی ذمہ دار ہے اور ہم پڑوسیوں کے ساتھ نہ صرف پانی اور بجلی بلکہ دوسرے شعبوں میں باہمی تعاون کر رہے ہیں.


274*9393**


ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
3 + 8 =