عدم جارحیت معاہدے پر دستخط سے خطے میں اعتماد سازی کا راستہ ہموار ہوگا: ایران

تہران، 28 مئی، ارنا-  اعلی ایرانی سفارتکار نے ایران اور خطی ممالک کے درمیان مذاکرات پر دلچسبی کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ خلیج فارس میں علاقائی ڈائیلاگ کے انعقاد سمیت عدم جارحیت معاہدے پر دستخط کے ان جیسے میکنزموں سے خطی ممالک کے درمیان اعتمادسازی اور تعمیری تعاون کا راستہ ہموار ہوگا۔

ان خیالات کا اظہار نائب ایرانی وزیر خارجہ "سید عباس عراقچی" نے منگل کے روز قطر کے نائب وزیر اعظم اور وزیر خارجہ "شیخ محمد عبدالرحمن آل ثانی" کیساتھ ایک ملاقات میں گفتگو کرتے ہوئے کیا۔



 انہوں نے ایران کیخلاف دباؤ اور پابندیوں میں اضافہ ہونے کی امریکی پالیسی پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ خطے میں پائیدار قیام امن و استحکام کا حصول اس وقت ممکن ہوگا جب علاقے کے سارے ممالک کی قومی سلامتی اور اقتصادی مفادات فراہم ہوجائے۔



عراقچی نے مزید کہا کہ اسلامی جمہوریہ ایران نے خطے میں قیام امن کے حوالے سے تعمیری کردار کیا ہے لیکن امریکہ، ناجائز صہیونی ریاست اور ان کے اتحادیوں کو خطے میں اپنے جارحانہ اقدامات کا خمیازہ بھگتنا پڑے گا۔



انہوں نے ایک بار پھر ایران اور امریکہ کے درمیان ہر کسی طرح کے مذاکرات کا مسترد کرتے ہوئے ایران اور خطی ممالک کے درمیان مذاکرات پر دلچسبی کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ خلیج فارس میں علاقائی ڈائیلاگ کے انعقاد سمیت عدم جارحیت معاہدے پر دستخط کے ان جیسے میکنزموں سے خطی ممالک کے درمیان اعتمادسازی اور تعمیری تعاون کا راستہ ہموار ہوجائے گا۔



 اس موقع پر قطر کے وزیر خارجہ نے خطے کی حساس صورتحال اور حالیہ کشیدگی پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے ایران اور قطر کے درمیان مذاکرات کا سلسلہ جاری رکھنے پر زور دیا۔



9467**



ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@


آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
9 + 8 =