دفاعی حکمت عملی میں جوہری ہتھیاروں کی کوئی جگہ نہیں: ایرانی سفیر

تہران، 28 مئی، ارنا - فرانس میں تعینات ایرانی سفیر نے کہا ہے کہ اسلامی جمہوریہ ایران کی دفاعی حکمت عملی میں جوہری ہتھیاروں کی ہرگز گنجائش نہیں ہے.

یہ بات 'بہرام قاسمی' نے آج بروز منگل فرانس میں 'خلیج فارس میں کشیدگی کی کمی' کے عنوان سے منعقدہ ایک کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہی.
انہوں نے کہا کہ ایران ہرگز جوہری ہتھیاروں کے پیچھے نہیں ہے اور جوہری ہتھیاروں کے عدم استعمال پر حضرت آیت اللہ خامنہ ای کے فتوی کےعلاوہ جوہری توانائی کے عالمی ادارے نے 15 بار ایران کی شفاف کارکردگی کی تصدیق کی ہے.
انہوں نے کہا کہ ہم خلیج فارس کے بعض ممالک کے ساتھ باہمی مذاکرات اور غلط فہمیوں کو دور کرنے پر تیار ہیں لیکن یہ ممالک ہیں جنہوں نے اب تک خطے کی امن اور استحکام کے قیام کیلئے ایران کے خیر خواہانہ اقدامات کا جواب نہیں دیا ہے.
انہوں نے مزید کہا کہ خطے میں کوئی ملک اکیلے امن اور استحکام اور سلامتی کی ضمانت نہیں دے سکتا ہے بلکہ تمام خطی ممالک کو اس حوالے سے بھرپور کوشش کرنی چاہیے.
قاسمی نے کہا کہ پر امن جوہری سائنس کا استعمال، جس پر عالمی جوہری معاہدے میں زور دیا گیا ہے ایران کے واضح حقوق میں سے ایک ہے.
انہون نے کہا کہ ایران نے گزشتہ سالوں میں بارہا عدم جارحیت کے معاہدے کی تجویز دی ہے لیکن ابھی بھی ان ممالک کی جانب سے اس تجویز کی کوئی اہمیت نہیں دی گئی ہے.


274*9410*9393**

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
2 + 10 =